حدیث کی تحقیق و تخریج درکار ہے ( فاتحہ خلف الامام

malik shahzad latif نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏فروری 12, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. malik shahzad latif

    malik shahzad latif رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏دسمبر 9, 2011
    پیغامات:
    33
    السلام علیکم ورحمۃ‌اللہ وبرکاتہ

    فاتحہ خلف الامام:

    حَدَّثَنَا بَحْرُ بْنُ نَصْرٍ ، قَالَ : حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ سَلامٍ ، قَالَ : حَدَّثَنَا مَالِكٌ ، عَنْ وَهْبِ بْنِ كَيْسَانَ ، عَنْ جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ ، عَنِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ، أَنَّهُ قَالَ : " مَنْ صَلَّى رَكْعَةً ، فَلَمْ يَقْرَأْ فِيهَا بِأُمِّ الْقُرْآنِ ، فَلَمْ يُصَلِّ إِلا وَرَاءَ الإِمَامِ " .

    حضرت جابر بن عبدالله رضی الله عنہ، رسول الله صلے الله علیہ وسلم سے مروی ہیں کہ جس نے ایک رکعت پڑھی پھر اس میں ام القرآن (قرآن کی ماں یعنی سورہ فاتحہ) نہ پڑھی، تو اس نے نماز نہ پڑھی, مگر امام کے پیچھے (ہو تو ضرورت نہیں).

    [(1) شرح معاني الآثار للطحاوي » كِتَابُ الصَّلاةِ » بَابُ الْقِرَاءَةِ خَلْفَ الإِمَامِ: ١٢٠٩(811),


    [​IMG]
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,938
    اس حدیث کو طحاوی کے علاوہ بیقہی اور دارقطنی نے بھی روایت کیا ہے ۔ اور امام دارقطنی نے اس روایت کو نقل کرنے کے بعد فرمایا ہے ۔
    یحیى بن سلام ضعیف ہے اوردرست بات یہ ہے کہ یہ روایت بھی مرفوع نہیں بلکہ موقوف ہے ۔

    لہذا یہ روایت یحیى بن سلام کے ضیعف ہونے کی بناء پر پایہء ثبوت کو نہیں پہنچتی !
     
  3. malik shahzad latif

    malik shahzad latif رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏دسمبر 9, 2011
    پیغامات:
    33
    جزاک اللہ خیرا
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں