کیا پانی اور تیل پر دم کرنا قرآن اور حدیث سے ثابت ھے ؟

ام ثوبان نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏اپریل 16, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ام ثوبان

    ام ثوبان رحمہا اللہ

    شمولیت:
    ‏فروری 14, 2012
    پیغامات:
    6,690
    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    کیا پانی اور تیل پر دم کرنا قرآن اور حدیث سے ثابت ھے ؟

    ھماری قرآن کی ٹیچر کہہ رھی تھیں کہ جب کہ کھانے پینے والی چیز کو پھونک مارنے سے منع کیا گیا ھے ؟

    کیا کسی شیخ سے دم کروانے والے بھی ان لوگوں میں شامل نہیں ھوں گے جو بغیر حساب کے جنت میں جائیں گے ؟؟؟؟
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,938
    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

    ۱۔ جی ہاں ثابت ہے ۔ رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے کہ دم کرنے میں کوئی حرج نہیں جبتک اس میں کوئی شرک نہ ہو ۔ (صحیح مسلم : ۲۲۰۰)

    ۲۔ کھانے پینے کی چیز پر پھونک مارنا منع ہے , لیکن دم والی پھونک اس سے مستثنى ہے ( صحیح بخاری :۴۱۰۲)

    ۳۔ نہیں ہونگے !
     
  3. ام ثوبان

    ام ثوبان رحمہا اللہ

    شمولیت:
    ‏فروری 14, 2012
    پیغامات:
    6,690
    جزاک اللہ خیرا
    اللہ تعالی آپ کو شفا دے آمین
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں