گناہ کا عبرت ناک دنیوی انجام

اہل الحدیث نے 'اسلامی متفرقات' میں ‏ستمبر 22, 2020 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,047
    گناہ کا عبرت ناک دنیوی انجام

    انتخاب :محمد خبیب احمد

    امام الجرح والتعدیل یحیی بن مَعین (وفات233ھ) فرماتے ہیں :
    " میرا ایک ہمسایہ گورکَن(قبریں تیار کرنے والا) تھا، جس کا نام صَبیح تھا . وہ پرانی قبر کو اکھیڑتا، اس میں سے انسانی ہڈیاں نکالتا اور ایک بہت بڑے گڑھے میں پھینک دیتا، کُتّے آتے ان ہڈیوں کو نوچنا شروع کر دیتے.
    میں نے ایک رات اسے کہا کہ میرے اہلِ خانہ گھر نہیں، آپ آج کی رات میرے یہاں گزاریں. وہ کہنے لگا کہ میرے لیے مشکل ہے، میرا اصرار اس کے انکار پر غالب آگیا، جب وہ آیا تو پوری رات کتوں کی طرح بھونکتا اور نیند سے کوسوں دور رہا ، جب صبح ہوئی تو وہ سو گیا، میں نے کہا: تو برباد ہو! تجھے کیا ہے؟
    تو وہ گورکن آگے سے کہنے لگا : میری تو ہر رات اسی طرح بیتتی ہے، میں سو نہیں سکتا اور میں کتوں کی طرح بھونکتا ہی رہتا ہوں."
    معرفۃ الرجال لابن معین :(ص 426 فقرہ 1764 روایۃ ابی العباس احمد بن محمد بن القاسم بن محرز).
    اعاذنا اللہ من کل خزی!
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں