آدمی چار قسم کے ہوتے ہیں

ابوعکاشہ نے 'متفرقات' میں ‏اگست 9, 2017 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    13,470
    آدمی چار قسم کے ہوتے ہیں

    آدمی چار قسم کے ہوتے ہیں الخليل بن أحمد الفريدي کا قول ہے، بعض لوگوں نے حدیث کہا ہے جو کہ درست نہیں.عربی سے ترجمہ محض فائدہ کے لیے نقل کیا جا رہا ہے. خلیل الفراھیدی عربی زبان و ادب و علم العروض کے امام تھے .پیدائش وتعلق عمان سے تھا.100 ہجری میں پیدا ہوئے. بصرہ عراق میں 170 ہجری میں وفات پائی. صابر و شاکر مشہور تھے. مشہور نحوی سیبویہ کے استاذ تھے ( بشکریہ وکی پیڈیا)

    الخليل بن أحمد الفريدي کہتے ہیں
    الرجال أربعة:
    1-رجل يدري أنه يدري ، فذلك العالم فاسألوه ؛ 2-ورجل يدري ولا يدري أنه يدري ، فذلك الناسي فذكروه؛
    3-ورجل لا يدري ويدري أنه لا يدري ، فذلك الجاهل فعلموه؛
    4-ورجل لا يدري ولا يدري أنه لا يدري ، فذلك الأحمق فاجتنبوه
    لـ( الخليل بن أحمد الفراهيدي)


    آدمی چار قسم کے ہوتے ہیں
    1 - ایک آدمی جانتا ہے (علم والا ہے) اور اس کو معلوم ہے کہ وہ کیاجانتا ہے (علم والا) ہے - تو وہ عالم ہے، اس سے سوال کرو (یعنی اس سے علم سیکهو )
    2 -ایک آدمی وہ ہے جو جانتا ہے (یعنی علم رکهتا ہے ) اور اس کو پتہ نہیں کہ وہ علم والا ہے تو وہ غافل ہے اس کو آگاہ کرو -
    3 - ایک وہ آدمی جو کچھ بھی نہیں جانتا اور اس کو معلوم بهی ہے کہ وہ کچھ نہیں جانتا ؛ وہ جاہل ہے اس کو (کچھ نہ کچھ) سکھاؤ -
    4 - اور چوتھا آدمی وہ ہے جو کچھ بھی نہیں جانتا اور یہ بھی نہیں جانتا کہ وہ کچھ بھی نہیں جانتا - پس وہ بیوقوف ( احمق ) ہے اس سے بچ کر رہو ( اس سے دور رہو )

    ترجمہ منقول.
    ( کچھ ترمیم کے ساتھ).
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
    • مفید مفید x 1
  2. حافظ عبد الکریم

    حافظ عبد الکریم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏ستمبر 12, 2016
    پیغامات:
    349
    ماشاء اللہ
     
    • حوصلہ افزا حوصلہ افزا x 1

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں