مقبوضہ کشمیر بھارتی فوج نے نہتے احتجاجی مظاہرین اور ایمبولینسوں پر گولیاں برسا دیں

عائشہ نے 'اسلام اور معاصر دنیا' میں ‏جولائی 10, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,106
    حالیہ دنوں میں حزب المجاہدین کمانڈر برہان وانی کی شہادت کے بعد احتجاجی مظاہروں اور پولیس سے نہتے کشمیریوں کی جھڑپوں کے واقعات میں اضافہ ہو گیا تھا۔ آج بھارتی فوج نے ظلم کی انتہا کرتے ہوئے نہتے مظاہرین پر گولیاں برسا دیں جس کے نتیجے میں اب تک گیارہ کشمیری شہید اور درجنوں زخمی ہو چکے ہیں۔(اعدادوشمار بشکریہ الجزیرہhttp://www.aljazeera.com/news/2016/...-fire-kashmir-protesters-160709125142182.html ) اس دوران جو ایمبولینسیں امدادی سرگرمیوں میں مصروف تھیں ان کو بھی نہیں بخشا گیا اور امدادی عملے کو بھی خون میں نہلا دیا گیا۔انا اللہ وانا الیہ راجعون۔
     
  2. مریم جمیلہ

    مریم جمیلہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 26, 2015
    پیغامات:
    111
    انا لله وانا اليه راجعون۔ اللہ تعالی کشمیر کے مسلمانوں کی مدد فرمائیں اور ظالموں کو ان کے انجام تک پہنچائیں۔
     
  3. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,106
    آمین۔ کشمیر کے محاصرے، کرفیو اور ظلم وتشدد کی سیاہ رات کو 7 دن ہو چکے ہیں، 40 نہتے کشمیری شہید، 1050 سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔ کرفیو کی وجہ سے لوگ غذائی کمی کا شکار ہو رہے ہیں۔ ہسپتالوں میں زخمیوں کا ہجوم ہونے کی وجہ سے کشمیری ہسپتالوں میں ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کی گرمیوں کی چھٹی منسوخ کر دی گئی ہے۔ انٹرنیٹ اور موبائل سروسز پر کہیں جزوی اور کہیں کلی پابندی ہے۔ خاندان اپنے لاپتہ افراد کی تلاش میں شدید مشکلات کا شکار ہیں۔
     
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,106
    انڈین میڈیا بھی چلا اٹھا۔ انڈیا کے این ڈی ٹی وی کی ایک رپورٹ
     
  5. انا

    انا -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 4, 2014
    پیغامات:
    1,351
    انا للہ و انا الیہ راجعون ۔ افسوس صد افسوس ۔مجھ سمیت ہماری قوم قندیل بلوچ پر رو رہی تھی جب معصوم انشا ملک کو گھر کے اندر سے ہی گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔ اتنا ظلم اور انٹرنیشنل میڈیا سمیت سوشل میڈیا پرپر بھی اس بچی کے لیے کوئی آواز نہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,106
    آوازیں تو بہت اٹھ رہی ہیں، لیکن پاکستانی آواز جتنی توانا ہونی چاہیے تھی نہیں ہے۔
    کشمیری کرفیو، فون،پریس بین کے باوجود بہت اچھے طریقے سے اپنی مشکلات دنیا تک پہنچا رہے ہیں بہت با ہمت قوم ہے۔
    ابھی حال میں زخمیوں اور شہدا کا سروے ہوا ہے اس کی رپورٹ
    “Most of the martyrs are teenaged youth besides three women and became victims of target firing by CRPF, Indian army and SOG of Police,”
    “Most of the victims of this barbarity have received bullets and pellets on their vital parts above the legs which have led either to their death or permanent disability,” the statement detailed.
    http://www.kashmirlife.net/kashmirn...-have-targeted-vital-parts-of-victims-111966/
     
  7. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    13,534
    جو لوگ یہ کہتے ہیں کہ پاکستانیوں کو اب سمجھ لینا چاہیے کہ کشمیر ، کشمیر جہاد، کشمیر آزادی کے نام پر کشمیریوں کو دھوکہ دیا جارہا ہے ۔ اور اس دھوکہ کی شکار پاکستان او رکشمیر کی عوام ہے ۔ نام نہاد لشکری ، حزبی ،بدری دینی وسیاسی جماعتیں لوگوں کو دھوکہ دے رہی ہیں ، تو ان کی یہ بات تقریبا درست ہی معلوم ہوتی ہے
    ہم جانتے ہیں کہ 1990 کی دہائی میں شروع ہونےو الی تحریکوں نے کشمیریوں کو کچھ نہیں دیا ۔کشمیریوں کو لاشیں اور پاکستانیوں کو نام نہاد جہادی اور تکفیری دیے ۔ کچھ پتا نہیں کرنا کیا ہے ۔کوئی روڈ میپ نہیں ۔ صرف چیخ و پکار ہے ۔ مقصد صرف انڈیا کو لعن طعن کرنا ہے ۔ خود کچھ نہیں کرنا ۔آنے والے چالیس پچاس سالوں میں کشمیر ایسے ہی رہے گا ۔دینی جماعتیں چندہ اکٹھی کرتی رہیں گی اور سیاسی جماعتیں ووٹ ۔
     
    • متفق متفق x 1
  8. انا

    انا -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 4, 2014
    پیغامات:
    1,351
    وہ لوگ تو الحمداللہ اپنی بھرپور کوشش کر رہے ہیں ۔ جی پاکستانی آواز کے علاوہ باقی دنیا بھی اس موضوع پر بات ہی نہیں کرنا چاہتی ۔ ایدھی صاحب کا انتقال ہوا تو ہر شخص افسردہ تھا ۔ کسی حد تک انٹریشنل میڈیا نے بھی کووریج دی۔ فیس بک وغیرہ پر ہر جگہ انہی کے متعلق پیغامات تھے۔ ان کے فوری بعد قندیل بلوچ کی خبر بھی اتنے ہی زور و شور سے سامنے لائی گئی۔ یہاں تک کہ ہمارے ہاں کا جو مقامی اخبار ہے اس نے قندیل بلوچ کی honor killing کے ساتھ ہیڈلائن دے دی (میں نے چار باتیں ادھر سنا دیں تھیں لیکن پاکستانی خود اپنے اور اپنے وطن کے دشمن ہوئے ہیں آپ غیروں کو کیا کہیں)لیکن کشمیر میں اس قدر ظلم ہوا اور اس پر سبھی خاموش ۔نہ میں نے سوشل میڈیا پر اتنا احتجاج دیکھا ، نہ یہاں پاکستانی کمیونٹی میں ۔ شاید ہی یہاں کسی کو خبر ہو کہ ظالموں کی پیلیٹ گن کی وجہ سے کتنے لوگوں کی جانیں اور بینائی چلی گئی۔ یہاں مجلس پر ویڈیو دیکھنے کے بعد میں نے پھر اس اخبار کو لکھا کہ کچھ خبر اس کشمیری بچی کی بھی بتا دیتے۔ جس پر مکمل خاموشی ہی ہے۔ اور ان لوگوں کی خاموشی تو سمجھ بھی آتی ہے۔ ان کا میڈیا دشمنی میں اتنا آگے ہے کہ صرف وہی خبریں بتاتا ہے جس سے اسلام اور مسلمان ملکوں کا نام بدنام ہو سکے۔ لیکن مجھے اپنے لوگوں کی خاموشی پر بہت دکھ ہوا۔
     
    • متفق متفق x 2
  9. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,106
    14 سالہ انشاء ملک ہفتہ بھر پہلے تک پیلیٹ گن کے وار کا نشانہ بننے والی سب سے کم عمر کشمیری تھی، پچھلے ہفتے اس سے بھی کم عمر 13 سالہ میر عرفات اور 8 سالہ آصف پیلیٹس سے شدید زخمی ہو کر معذور ہو گئے ۔ اور کل پرسوں کی خبر کے مطابق بھارتی بربریت کا نشانہ بننے والوں میں 4 سالہ بچے بھی ہیں۔
    http://www.hindustantimes.com/india...-as-4-years/story-1tMf1PBrubqxTw3f5V3IgL.html
    http://www.siasat.com/news/kashmir-pellet-gun-victims-young-4-years-989648/
    کشمیر میں مسلسل کرفیو، نیٹ فون اخبار چھپنے پر پابندی کی وجہ سے شہدا اور زخمیوں کی مکمل تفصیلات دنیا تک پہنچنے میں دیر لگ رہی ہے۔ سوشل میڈیا ہی خبر کا واحد ذریعہ رہ گیا ہے یا کچھ کشمیری اخباروں کی ویب سائٹس پابندیوں کے باوجود خبر پہنچانے میں کامیاب ہو رہی ہیں۔
     
  10. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    13,534
    خیر،پاکستانیوں کو توحورالعین کی تلاش ہے ،ان کے علماء اور بزرگوں کو حقائق سے باخبر رہنے یا رکھنے میں کوئی دلچسپی نہیں ،وہ کیا اس پوسٹ پرردعمل ظاہر کریں گے ۔ ہاں یہ ضرور سوچ رہے ہوں گے کہ یہ شخص جہاد کا مخالف اورمجاہدین کا دشمن ہے، سوتے رہو : )
    لیکن اس تجزیہ پر ایک ہندوستانی بھائی متفق ہیں ، شاید پچھلے دو سالوں میں پہلی بار یہ معجزہ ہوا ہے کہ وہ میری پوسٹ پر تشریف لائے ہیں ۔ ورنہ ہمیشہ انتظامی رکن کے مخالفین کی حوصلہ افزائی کرتے رہے ہیں ۔یہ الگ بات ہے کہ متفق ہونے کے لئے ضروری ہے کہ آپ اس "موقف" کے تعلق سے مصدقہ معلومات رکھتے ہوں ۔
    جو لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ ہندوستانی مسلمانوں کو پاکستانیوں سے محبت ہے ۔ وہ خوش فہمی میں مبتلا ہیں ۔لیکن پاکستانیوں کو ان سے اندھی محبت ہے ۔ ہر اچھے برے کام کا کریڈٹ انہیں ٹرانسفرکردیتے ہیں ۔ یہ کہتے ہوئے کہ یہ سب تمہارا کرم ہے آقا کہ بات اب تک بنی ہوئی ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں