تین خدا کا قائل مشرک نہیں ہوتا

سلمان ملک نے 'مَجلِسُ طُلابِ العِلمِ' میں ‏دسمبر 19, 2010 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. سلمان ملک

    سلمان ملک -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 8, 2009
    پیغامات:
    926
    Last edited by a moderator: ‏دسمبر 21, 2010
  2. ابو ابراهيم

    ابو ابراهيم -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مئی 11, 2009
    پیغامات:
    3,873
    لقد كفر الذين قالوا ان الله ثالث ثلاثة (سورة المائدة :73)
     
  3. منصف

    منصف -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 10, 2008
    پیغامات:
    1,920
    باوجود اس حقیقت کے کہ حنفی مقلد بریلوی فرقہ عقائد کے حوالہ سے گمراہ ، شرکیہ اورمسلمانوں کے لیے دیگر باطل گمراہ فرقہ کی طرح ہلاکت خیز اور تباہ کن ہے ۔۔
    لیکن بہرکیف تمام مشرک غلط اور باطل فرقوں کے لیے قبل از موت، توبہ اور پند و نصائح کا دروازہ کھلا ہے۔۔بجائے انکے عقائد کا مذاق اڑانے کے یا انکے خلاف
    مواد اکھٹا کرکے بے جا توانائی خرچ کی جائے ۔ اس سے کہیں بہتر ہوتا کہ اپنے اخلاق و کردار سے انکو وعظ و نصیحت کرتے ۔۔بہتر انداز میں تبلیغ کرتے ۔۔
    کیونکہ وہ کیا ہے کیا نہیں یہ صحیح العقیدہ مسلمانوں کو پتہ ہے ۔۔پھر کوئی بار بار ایک ہی بات کو دہرائی جائے ۔۔۔۔

    معاف کیجییے گا ۔۔۔اس طرح کی حرکت میں نے ایک "باطل" فورم پر دیکھا کہ ایک الگ سے سیکشن وتھریڈ انکے نام سے موسوم ہے ۔۔۔
    "رضاخانی ریسٹورانٹ" ۔۔۔"رضاخانی یہ رضاخانی وہ"۔۔۔یہ سب بکواس لکھ کر پتا نہیں کونسے دین کی خدمت ہورہی ہے ۔۔۔؟؟؟

    اگر گمراہ عقائد والوں کا شیوہ ہم نے اختیار کرہی لیا ہے تو انکے "عقائد" اختیار کرنے میں کیا رکاوٹ ہے ؟؟؟
    آخر کار حرکت تو دونوں کی ایک ہی جیسے ہے ۔۔کیا فرق رہ جائے گا دونوں میں
    ایسی حرکت کرکے ؟؟؟

    اور سب چھوڑ کر ہم لوگوں کو پتا نہیں کیا "شوق" ہے کہ جب بھی کسی فرقہ کی بات کرتے ہیں تو اسکو نیچا دیکھانے کے لیے سب سے پہلے اس فرقہ کا بانی یا انکی شخصیات کو
    "ٹارگیٹ" کرتے ہیں وہ بھی وہ جو کہ گزرچکے ہیں حالانکہ نہ تو وہ ہامری تنقید کا جواب دے سکتے ہیں نہ ہی وہ اس بات سے باخبر ہے کہ انکے پیچھے انکے "پیروکار" نے انکی مبالغانہ تعریف سے
    انکو کیا سے کیا بنادیا ۔۔۔کیا یہ خبر اس فوت شدہ تک پہنچ رہی ہے کہ کوئی اسکو "اعلیٰ حضرت" کہہ رہا ہے تو کوئی "آلہ حضرت" ۔۔۔
    دونوں ہی رویہ غلط ہے کیونکہ حدیث ہے کہ "مردار کو برا نہ کہو۔۔۔کہ وہ اپنے انجام کو پہنچ چکا ہے"

    المختصر اس طرح کی تھریڈ یا موضوع صرف وہی لکھتا ہے جو یا تو ان سے حد سے زیادہ بے زار ہے یا پھر ان لوگوں کے ناوراں رویے سے دل آزار ہوکر اپنے دل کی بھڑاس کہیں اور نکالتا ہے
     
  4. محمد عرفان

    محمد عرفان -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 16, 2010
    پیغامات:
    764
    گمراہ فرقوں کے عقائد باطلہ کو واضح کرنے میں کیا حرج ہے؟؟اور احمد رضا خان کی بات بریلویوں کے نزدیک قرآن وسنت سے بڑھکر ہے۔۔۔۔
     
  5. شاہد نذیر

    شاہد نذیر -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏جون 16, 2009
    پیغامات:
    774
    جس شخص کے نزدیک تین خدا کا قائل مشرک نہیں ہوتا۔ اس کے نزدیک ایک خدا کا قائل ضرور مشرک ہوتا ہے۔ استغفراللہ
    خود کو مسلمان کہنے والا کوئی شخص جب اسطرح کی بات کرتا ہے تو وہ اصل میں وحدت الوجود کے گندے عقیدے کے زیر اثر ہوتا ہے۔ جس میں ہر چیز خدا ہوتی ہے اور وہی شخص مواحد ہوتا ہے جو ہر چیز کے آگے اسے خدا سمجھ کر سجدہ ریز ہو جائے۔ اس کے برعکس صرف ایک الہ کا قائل مشرک ٹہرتا ہے کیونکہ وہ اس گندے وحدت الوجود کا منکر ہوتا ہے۔
    وحدت الوجود جیسے عقیدے کو حق سمجھنے والے اور کئی الہ کے قائل کے کافر و مشرک ہونے میں کوئی شک نہیں۔ اور ایک سے زائد الہ کے قائل کو مشرک نہ سمجھنے والے کے کفر اور شرک میں بھی کوئی شبہ نہیں
     
    Last edited by a moderator: ‏دسمبر 19, 2010
  6. منصف

    منصف -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 10, 2008
    پیغامات:
    1,920
    بلاشبہ حرج نہیں بلکہ کار ثواب ہے ۔۔۔مگر یہ طریقہ کار غلط ہے اس سے بدلی پھیلے گی اور کوئی
    "بریلوی" حق کے قریب آنا بھی چاہے گا تو اس طرح کی بات سے بدگمان ہوگا جوکہ ہمارا مقصد نہیں
    ہمارا مقصد کسی کو چھیڑنا، چڑھانا، طنز و تنقید نہیں بلکہ حسن سلوک سے اسکو حق کی دعوت دینا
    ہونا چاہیے ۔۔۔تاکہ مخالف فرقہ کم از کم آپ کی بات سنے ۔۔۔ایسا نہ ہو کہ جواب میں وہ بھی کوئی
    ایسی اوچھی حرکت کر بیٹھے جس سے آپ کی دل آزاری ہو اور پھر یوں نزع کا باعث بنے
    جو درست طریقہ تبلیغ نہیں


    جانتا ہوں ۔۔۔۔پر کسی کے اکابر و شخصیات کو جو کہ گزرچکے ہیں انکو طعن و تشنیع کا نشانہ
    بنانا یا بالفاظ دیگر گھڑے مردے اکھاڑنے کی ذمہ داری آپ کو اسلام نے نہیں دی ۔۔
    انکے ساتھ اللہ قبر میں کیا معاملہ کررہا ہے یہ ہم کو نہیں معلوم نہ ہی ہم اس بات کہ مکلف بنائے گئے ہیں

    ہمارا کام مخالفین کی تشہیر کی بجائے صرف اپنی بات کرنا حق و صبر سے کام لینا ہے
     
  7. محمد ارسلان

    محمد ارسلان -: Banned :-

    شمولیت:
    ‏جنوری 2, 2010
    پیغامات:
    10,422
    السلام علیکم!
    اہل علم کے اندر کودنے کی معذرت کے ساتھ۔
    مصنف بھائی آپ نے لکھا کہ یہ طریقہ غلط ہے چلو مان لیتے ہیں کہ یہ طریقہ غلط ہے تو صحیح کون سا طریقہ ہے آپ وہ بات بیان کر دیں جو صحیح طریقہ ہو بات کو تو غلط آپ نے مان لیا اب آپ وہ طریقہ یہاں ہمارے سامنے لکھیں تاکہ ہم آپ سے صحیح طریقہ سیکھ سکیں بھائی میرے یہ آپ پر تنقید نہیں ہے کیونکہ آپ کی عزت اپنی جگہ لیکن میں نے اکثر لوگوں کو دیکھا ہے کہ جب باطل لوگوں کی عقیدے کی گندگی کو واضح کیا جائے تو وہ حرکت میں آ جاتے ہیں۔ان سے کوئی یہ پوچھے کہ بریلوی اور دیوبندی اور شیعہ جو قرآن کا مذاق اڑاتے ہیں اللہ کو گالی دیتے ہیں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں گستاخی کرتے ہیں ہمارے "اچھے" طریقے سے اصلاح کرنے والے بھائیوں کو وہ نظر نہیں آتا۔سلمان ملک بھائی نے بالکل اچھے انداز میں تھریڈ لکھا ہے۔
    یہ بات روشن حقیقت ہے کہ ہمیں پیارو حکمت سے دعوت دینی چاہیے لیکن حق بات بھی کہنی چاہیے۔
     
  8. سلمان ملک

    سلمان ملک -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 8, 2009
    پیغامات:
    926
    منصف بھائی اک طرف تو آپ شعیہ کے بارے میں سخت موقف رکھتے ہیں اور ان کو کافر سمجھتے ہیں حالانکہ کلمہ تو وہ بھی پڑھتے ہیں نبی کریم کو آخری نبی بھی سمجھتے ہیں اور جن کا واضح کلمہ کفریہ دکھایا ہے ان پر آپ کو کوئی اعتراض نہیں یعنی کے وہ سر عام اس بات کے داعی ہیں اور ان کی طرف سے اس بات کی کوئی تردید بھی نہیں آئی اور آپ کا یہ کہنا ہے کہ ہم ان کی کفریہ اور شرکیہ عبارتیں لوگوں کے سامنے کیوں رکھ کر پوچھتے ہیں کہ آپ کی کیا رائے ہے یہ بات آپ کو ناگوار گزری ، اور آپ کا یہ کہنا اس طرح کی عبارات دیکھ کر تو کو ئی بھی نزدیک نہیں آئے گا ، یہ بات آپ شعیہ کے بارے میں بھی سامنے رکھیں جب آپ ان کے بارے میں یہ عقیدہ رکھتے ہیں کہ حکومت ان کو کافر قرار دے تو یہ بات ان کو بھی ناگوار لگتی ہے اس طرح تو وہ بھی آپ کے پاس کھبی نہیں آئیں گے اور اپنے من سے ہی کوئی نتیجہ اتنی جلدی اخذ نہیں کر لیتے ، جب تک آپ راہنما کے کفریہ اور شرکیہ عقائد لوگوں کے سامنے بیان نہیں کریں گے تو پھر لوگ کس طرح آگاہ ہوں گے ، ورنہ وہ تو ان کو سب کچھ سمجھ کر اندھی تقلید کر رہے ہیں
    جو عقیدہ شعیہ کا ہے وہی ان کا بھی ہے فرق صرف اتنا ہے کہ اس کو آپ دیکھیں اور اس پر جو تقیہ کی چادر پڑی ہوئی ہے اس کو اتارنا ہے

    شعیہ بھی سیدنا علی رضی اللہ عنہ کو مشکل کشا ۔ حاجت روا ، مولا ئے کائنات سمجھتا ہے اور بریلوِی بھی ، شعیہ بھی ناد علی پکارتا ہے اور اعلی حضرت بھی اگر شعیہ کلمے کے ساتھ سیدنا علی رضی اللہ عنہ کے نام کا اضافہ کرتا ہے تو یہاں سرکار پورا کلمہ ہی بدل دیا جاتا ہے ، جہاں شعیہ صحابہ پر کھلے عام تبرا کرتا ہے وہاں ڈکھے چھپے انداز میں یہ بھی کر دیتے ہیں ، ذرا حدائق بخشش کا مطالعہ بھی کر لیں ،لگے ہاتھوں خلافت و ملوکیت بھی دیکھ لیں
    اور آپ باضد ہیں ان کے کفر کو ظاہر نا کرو ، محترم دو رنگی اچھی چیز نہیں
     
  9. ابومصعب

    ابومصعب -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 11, 2009
    پیغامات:
    4,067
    السلام علیکم
    منصف بھائی اور سلمان بھائی سے بصد معذرت عرض ہے کہ ، ہم موضوع پر رہیں۔
    یہاں‌سلمان بھائی نے جس چیز کی طرف اشارہ کیا ، وہ جناب طاہر القادری صاحب کے وہ باتیں‌ہیں‌جو کسی طور پر بھی قابل قبول نہیں‌ہوسکتی، اسلئے اس تھریڈ پر میں‌نہیں‌سمجھتا کہ کوئی اعتراض ہوسکتا ہے۔۔۔۔!
    البتہ منصف بھائی کی وہ بات کہ، ہمیشہ، دوسروں کی غلط چیزوں‌کو منظر عام پر لاتے رہنے کا ذمہ لینے کے بجائے ، غلطیوں‌اور گمراہیوں‌کی اصلاح پیہم کرتے رہنے کا عمل مثبت ہتے۔اور پھر ساتھ ہی ساتھ ایسا انداز جس میں‌مخالف بات نہ بھی مانے تب بھی ہمارے اخلاق کا قائل ہو۔۔۔اس کی سب سے بڑی مثال جو کہ رہتی دنیا تک کے لئے مشعل راہ ہے۔۔وہ ہے اسوۃ حسنہ ۔۔جہاں‌آپ صلی اللہ علیہ وسلم کا اسوہ ایسا تھا کہ کفار بات نہیں‌مانتے ، پھر بھی آپکو صادق اور امین ،ا ور آپکے اخلاق کے اونچے مرتبے پر کبھی انگلی نہیں اٹھاسکتے تھے۔۔
    رہی بات طاہر القادری صاحب،اما م رضا وغیرہ کی تو یہ لوگ۔۔۔کسقدر گمراہ ہے۔۔۔یہ بات اب اظہر من الشمس ہے۔۔مزید اس پر روشنی ڈالنا یا نہ ڈالنا ۔۔کوئی خاص فرق نہیں‌پڑے گا۔۔ہاں‌انکی اصلاح‌کی غرض کی خاطر اگر انکے باطل عقائد کو سامنے لاکر۔۔۔حق سے بدلنے کی کوشش کریں‌وہ، زیادہ احسن طریقہ ہوسکتا ہے۔۔۔
    واللہ اعلم
     
  10. منصف

    منصف -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 10, 2008
    پیغامات:
    1,920
    محمد ارسلان اور سلمان ملک بھائی !!!!
    صحیح طریقہ وہی ہے جو نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے بتایا ہے ۔۔۔میں کون ہوتا ہوں صحیح طریقہ بتانے والا ۔۔آپ کو اگر یہ صحیح لگ رہا ہے تو پھر شوق سے اس کو جاری رکھے ۔۔۔
    قرآن کا مذاق اللہ اور اسکے رسول کی تضحیک کرنے والا یقینا مسلمان نہیں ۔۔۔پر نبی پاک کے دور میں بھی اللہ اور اسکے رسول کا مذاق اڑایا گیا دیکھنا یہ ہے کہ اس پر انہوں نے کیا طریقہ کار اپنایا تھا
    معاشرے میں جاری شرک و بدعت جہالت و گمراہی سبھی کو منظر عام پر لانا احسن کام ہے بلکہ فرض ہے مگر اس طرح نہیں ۔۔


    ہر اس شیعہ کو کافر کہنا جو اللہ اور اسکے رسول اور صحابہ کبار کے دشنام انگیزی کرے۔۔"سخت" مؤقف کیسے ہوگیا؟؟؟
    تشدد پسند لوگوں کو تبلیغ کرنا مشکل کام ہوتا ہے ۔۔۔میری مراد انسے ہٹ کر جو لوگ ہوتے ہیں معتدل مزاج انکو صحیح طریقہ سے تبلیغ کرنی چاہیے ۔۔۔

    باقی میں ٹہرا ایک کم علم طالب علم ۔۔۔آپ لوگوں کی بات سر آنکھو پر جس طریقہ کار آپ کو صحیح لگ رہا ہے خدارا اسکو جاری رکھے ۔۔۔۔مجھ سے غلطی ہوگئی ۔۔مجھے معاف کردے ۔۔۔
     
  11. منصف

    منصف -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 10, 2008
    پیغامات:
    1,920
    جزاک اللہ بہت ہی اچھی بات کہی آپ نے

    میرا کہنے کا مقصد صرف یہ ہے جسے شائد دوسرے صحیح سمج نہ پائے کہ یہ جو "پوسٹر" بناکر اشہاراتی طور طنزاً یا کسی بھی اصلاحی مقصد سے مخالف فرقہ کے خلاف مواد دیا جاتا ہے ۔۔۔
    اس سے حاصل کیا ہوتا ہے سوائے اپنوں میں رہ کر داد تحسین حاصل کرلیا اپنے دل کا جلاپن نکال لیا
    اور بس ۔۔
    کیا سمجھتے ہیں لوگ کہ جیسے ہی کسی بریلوی ۔۔شیعہ یا دیوبندی نے ایسا مواد دیکھا
    فوراً جائے نماز بچھا کر توبہ توبہ کرلیگا ۔۔۔یا پھر ہمارے ایمان تازہ یا مزید اضافہ ہوجائیگا ۔۔۔
    بلکہ الٹا ہی ہوگا وہ اپنے باطل فورم میں ایک نیا تھریڈ سجائے گا ۔۔۔پھر اس میں رنگ برنگی
    تصاویر اور ڈیزائن ڈال کر لکھے گا "وہابیوں کا کفر" وغیرہ وغیرہ ۔۔۔۔۔

    کیا ہورہا اس سب سے ۔۔۔کیا حاصل ہے؟؟؟/ کچھ بھی نہیں ۔۔۔
    عقائد ، مثلا شرک جو وہ لوگ درباز مزار پر کرتے ہیں۔۔۔۔صوفیوں کے گمراہ عقائد وحدت الوجود، وحدت الشہود ، وحدت الادیان ، حلول وغیرہ اور دوسرئ بدعات وغیرہ لوگوں کو آگاہ کیا جائے مگر بتانے کے اور بھی طریقہ ہیں۔۔۔پوسٹر وغیرہ سے نہیں

    میرا مؤقف ہے کہ صرف اپنی بات کی جائے اور گمراہ عقائد کے بارے میں لوگوں کو بتایا جائے نہ کہ یہ
    فلانا فرقہ ایسا ہے فلانا ایسا ہے وغیرہ وغیرہ ۔۔۔آپ اپنی بات کہے ۔۔تبلیغ کا حق ادا کریں ۔۔باقی اللہ پر چھوڑ دے وہ جسے چاہے ہدایت دے جسے نہیں اور پھر لوگوں پر چھوڑ دے وہ خودہی سمجھ جائینگے کہ کون باطل فرقہ ہے کون حق پر

    اگر کوئی بات بری لگی ہو تو معزرت ۔۔۔
     
    Last edited by a moderator: ‏دسمبر 19, 2010
  12. سلمان ملک

    سلمان ملک -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 8, 2009
    پیغامات:
    926
    ابو طلحہ بھائی اور منصف بھائی بات یہاں من پسند کی نہیِں ہے ، دعوت وہی ہے طریقہ بھی وہی ہے جو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم بتا کر گئے ہم اپنی مرضی کرنے والے کون ہوتے ہیں دین مکمل ہے اس میں کمی یا زیادتی کرنے کا اختیار کسی کے پاس نہیں ، اب اک چیز غلط ہے تو میں اس پر صحیح کی مہر تو نہیں لگا سکتا ، جب آپ اہل بدعۃ کو کہتے ہیں کہ یہ کام نا کرو تو وہ ہوچھتے ہیں کیوں نا کریں ، ہمارے بزرگ تو ایسے ہی کرتے آ ئے ہیں ہم بزرگوں کی بات کو نہیں چھوڑ سکتے ، اب آپ ہی بتائیں کس طرح اس گند کو نگل لیا جائے ، ظاہر ہے اس کا رد تو کرنا ہی ہوگا ، حالانکہ ہمارا مقصد کھبی یہ نہیں رہا ہے کہ ہم کسی کی تذلیل کریں اب اگر کوئی باضد ہو جاتا ہے تو پھر حق کو بتانا بھی لازمی ہو جاتا ہے ، اور اک بات ذہن نشین رہے منصف بھائی سارے شعیہ بھی کافر نہیں ،اس پر بھی علماء کا اتفاق ہے اور نا ہی سارے بریلوی مشرک ہیں
    آج تک الحمداللہ جتنے بھی لوگ راہ راست پر آئے ہیں وہ ان کفریہ اور شرکیہ عقیدوں کی وجہ سے ہی ممکن ہوا ہے ان کے سامنے جب یہ کفریہ عقیدے رکھے گئے تب ہی تو ان کو پتا چلا کہ یہ قرآن و سنہ کے خلاف ہیں
    باقی آپ کی بات سے اتفاق ہے کہ احسن طریقہ اختیار کیا جائے اب وہ طریقہ کیا ہوگا کس طرح ان کفریہ اور شرکیہ عقائد کا رد ہونا چاہیے اور عامۃ الناس کو کیسے بتایا جائے کہ یہ غلط عقائد ہیں
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں