وما أرسلناك إلا رحمة للعالمين کی تفسیر

ابوعکاشہ نے 'سیرتُ النبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم' میں ‏فروری 7, 2011 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,438
    [qh]بسم الله الرحمن الرحيم[/qh]

    [qh]وما أرسلناك إلا رحمة للعالمين[/qh] کی تفسیرمیں دو قول ہیں اور صحیح تر یہ ہے کہ آیت اپنے عموم آپ پر پے اور قدرتی طور پر اس کی دو وجوہ ہیں

    اول ::
    نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی رسالت کا نفع عام طور پر جملہ اہل علم کو پہنچا ہے ۔ اتباع کرنے والوں کو تو یہ کہ وہ دنیا و آخرت کی بھلائی کو پہنچ گئے اور جنگ جو دشمنوں کویہ کہ موت و قتل نے ان کو جلد لے لیا ، کیونکہ بدبختی ان کے لئے لکھی جا چکی تھی ، اب زندگی ان کے لیے عذاب کی شدت اور کژت کا سبب تھی ۔ اس لیے موت کا جلد آ جانا ان حق میں طول عمری سے بہتررہا ۔ رہے اہل ذمہ جو نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ ہم عہد ہو کر رہے ، وہ دنیا میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی ذمہ داری و عہد کے زیر سایہ آباد اور آسائش پذیر رہے اسی وجہ سے اب میں فرقوں کی نسبت شربھی کم ہو گیا ۔ رہے منافق سو اظہار ایمان سے ان کے جان و مال ، اہل و عیال محفوظ و محترم ہو گئے اور توارث وغیرہ میں مسلمانوں کے احکام ان پر جاری ہو گئے ، رہے وہ ملک اور قومیں جو دور دراز فاصلہ پر تھیں ، سو اللہ تعالٰی نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی رسالت کی وجہ سے اہل زمین سے عام عذاب کو اٹھا لیا ۔ اس بیان سے ثآبت ہوا کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی رسالت اہل علم کے لیے عام رحمت تھی اور دنیا کے تمام باشندوں کو رسالت محمدی کا نفع پہنچا ہے ۔

    دوم ::
    نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا وجود مبارک تو ہر ایک کےلیے رحمت ضرور ہے ، مومنین نے اس رحمت کو قبول کر لیا اور دنیا و آخرت کا نفع اٹھایا ، تو کفار نے اس رحمت کو قبول نہ کیا اور لوٹا لیکن اس سے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے سراپا رحمت ہونے میں کچھ فرق نہیں آتا ، مثلا کوئی دوا کسی مرض کے لیے مجرب ہے ، اب اگر کوئی اس کا استعمال نہ کرے گا تو اس مرض کے لئے اس دوا کے مجرب میں کچھ فرق نہ آئے گا ،۔

    الصلاة والسلام على رسول الله صلى اللّه عليه وسلم
    مؤلف : ابن قيم الجوزية رحمه الله
    مترجم :: قاضی محمد سلیمان سلمان منصور پوری رحمہ اللہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    جزاكم اللہ خيرا وبارك فيكم وتقبل منكم۔
    اگر دوسرے اركان بھی اس كتاب كے کچھ ابواب طبع كر رہے ہیں تو برادر سے رابطے ميں رہیں تا كہ محنت ضائع نہ ہو۔
    اور ربط يہاں ارسال كرنا نہ بھوليں۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں