کیا یہ علوم شریعت میں جائز ہیں؟۔۔۔

نعمان نیر کلاچوی نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏مئی 20, 2011 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. نعمان نیر کلاچوی

    نعمان نیر کلاچوی ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 25, 2011
    پیغامات:
    552
    السلام علیکم ورحمتہ اللہ

    امید ہے کہ شیخ محترم آپ خیریت سے ہوں گے۔۔۔

    گذارش یہ ہے کہ کیا جدید سائنسی علوم میٹو پاس کوپی۔۔۔Metoposcopy اور
    مولوسوپھی۔۔۔۔Molosophy کی شرعیت نے اجازت دی ہے؟
    تفصیلی جواب کا منتظر ہوں

    جزاک اللہ خیرا
     
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    وعليكم السلام ورحمت اللہ وبركاتہ
    ان شاء اللہ شرعى لحاظ سے جواز يا وعدم جواز كا فتوى تو شيخ محترم ہی ديں گے۔ كچھ طالبعلمانہ گزارشات ہیں۔
    Metoposcopy1- كوئى سائنسى علم نہیں، سائنس دان اسے سوڈو سائنس pseudoscience كہتے ہیں۔
    2- يہ جديد علم بھی نہیں ہے۔ بعض يورپین اس كى ابتدا 16 ويں صدى سے بتاتے ہیں جو غلط ہے عربوں کے ہاں یہ علم الفراسة اور علم القيافة كے نام سے اس سے پہلے موجود ہے۔ صحيح بخارى كى اس حديث ميں قائف اور اس كى قيافة شناسى پر نبي صلى اللہ عليہ وسلم كى مسرت واعجاب كا ذكر ہے۔
    [QH]دخل قائف ورسول الله صلى الله عليه وسلم شاهد . وأسامة بن زيد بن حارثة مضطجعان . فقال : إن هذه الأقدام بعضها من بعض . فسر بذلك النبي صلى الله عليه وسلم وأعجبه . وأخبر به عائشة . وفي رواية : وكان مجزز قائفا [/QH].
    بعض مسلم علماء مثلا امام الشافعي رحمه اللہ كے متعلق بھی مذكور ہے کہ آپ اس كے ماہر تھے۔ عربى زبان وادب ميں اس كا جابجا تذكرہ ملتا ہے۔ البتہ عرب اس كا تعلق علم نجوم سے نہیں جوڑتے جيسا كہ بعض يورپیوں اور يوناينوں نے جوڑا ہے۔ اس ليے حكم مختلف ہو جائے گا ۔
    3- Metoposcopy دراصل physiognomy كى ايك محدود شاخ ہے۔
    Moleosophy جسمانى نشانات (تل ، پيدائشى نشانات ) وغيرہ كا مطالعہ كر كے پيش گوئى كرنے كا علم ہے۔ يہ غيب كى باتيں بتانے ميں آتا ہے۔
     
  3. نعمان نیر کلاچوی

    نعمان نیر کلاچوی ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 25, 2011
    پیغامات:
    552
    جزاک اللہ خیرا محترم بہن۔۔اصل میں میٹو پاس کوپی کی چند قدیم کتابیں میرے ہاتھ لگی ہیں ۔۔میں نے سوچا اگر اس علم کی شریعت میں ممانعت نہیں تو پھر میں ان کتب کا اردو ترجمہ کر لوں گا۔۔نہیں تو پھر چھوڑ دوں گا۔۔۔
     
  4. رفیق طاھر

    رفیق طاھر ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,943
    قيافہ شناسی شریعت اسلامیہ میں جائز اور روا ہے , رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم کی موجودگی میں ایک قائف نے کہا تھا " إن ہذہ الأقدام بعضہا من بعض " تو رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم نے اس پر نکیر نہیں فرمائی بلکہ اظہار مسرت فرمایا
     
    Last edited: ‏دسمبر 30, 2016
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں