فوت شدہ کے لیے کیا کیا جاے

صفدر اعوان نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏دسمبر 17, 2011 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. صفدر اعوان

    صفدر اعوان -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 8, 2010
    پیغامات:
    150
    السلام علیکم ۔
    فوت شدہ آدمی کے لیے سب سےبھتر کیا کیا جاے۔
    2 ۔ کیا تیسرے دن جو قل ھوتے ھیں ۔اور ھفتہ بھر فاتحہ خوانی ھوتی رھتی ھے ان کی تفصیل بتا دیں
    3 -عورتیں قرآن پڑھتی ھیں یعنی مختلف پارے ۔اور آخر میں سجدے کوئ ایک عورت کرلے کیا ایسا ھوسکتا ھے
    4- اور مرنے والے کے لیے لاکھ دفع کلمہ شریف یا استغفار پڑھا جاتا ھے ۔کیا اس کا ثواب اس تک پہنچتا ھے
    5- کیا قرآن پاک پڑھ کر اس کا ثواب بخشا جا سکتا ھے
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,943
    ۱۔ فوت شدہ کی طرف صدقہ کیا جاسکتاہے , اگر وہ مومن ہے تو اسے اسکا اجر ملے گا ۔اسی طرح اسکے حق میں دعاء بھی کی جاسکتی ہے ۔ اسکی طرف سے قرض کی ادائیگی بھی کرنا ضروری ہے اسکا بھی اسے فائدہ پہنچتا ہے ۔ اسی طرح فوت شدہ پر روزوں کی قضاء فرض تھی تو اسکے اولیاء اسکی طرف سے روزہ رکھیں میت کو فائدہ ہوگا اسی طرح اگر اس پر حج فرض تھا تو اسکی طرف سے حج کرنا بھی اسے فائدہ دے گا ۔
    ۲۔ یہ سب بدعت ہیں , کتاب وسنت سے ثابت نہیں ۔
    ۳۔ سجدہ تلاوت فرض نہیں , مستحب ہے ۔
    ۴۔ نہیں !
    ۵۔ نہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں