آیا ت قرآنی

ماہا نے 'ادبی مجلس' میں ‏جنوری 15, 2012 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ماہا

    ماہا ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏نومبر 27, 2010
    پیغامات:
    351

    قرآنی آیات میں اتنا حسن ہوتا ہے کہ یہ غافل دلوں سے پردہ کر لیتی ہیں

    بہت ہی اچھا لگا مجھے یہ فقرہ اور دھیان ان لوگوں کی جانب چلا گیا جو حریر و ریشم کے جزدانوں میں اس لوح مقدس کو لپیٹ کر رکھ دیتے ہیں
    یا پھر بیٹی کو رخصت کرتے ہوئے سایہ کر دیتے ہیں اس مقدس کتاب سے
    او
    بھولے لوگو
    بیٹیوں کے گھر بسانے ہیں تو انہیں سورۃ نور و سورۃ احزاب با ترجمہ پڑھاؤ انہیں کہو بیٹا اپنی فلاسفی و سائیکالوجی کی بکس چھوڑ اور اس کتاب حق کو پڑھ
    تا کہ تیری دنیا بھی سنور جائے اور آخرت بھی
    میرے نوجوان بھائی تین تین گھنٹے ایف ایم سن لیں ان کے کان درد نہیں کرتے ادھر اعلان ہوا کے اذان کا ٹائم فورا ہیڈفون اتا ر کر جیب میں منتقل کر لیتے
    قرب قیامت کی نشانیاں ہیں یہ سب
    ہماری نوجوان نسل کی بڑی تعداد ایسی ہے کہ جہیں ناظرہ قرآن تک کی تعلیم نہیں دی گئی اس سلسلے میں ہم سب قصور وار ہیں دیکھیں ہم ملازم ہیں یا مالک، استاد ہیں یا شاگرد ہیں اگر ہم قرآن پڑھنا جانتے ہیں تو یہ ہمار فرض کے اس کو قرآن سکھائیں جو بدقسمتی سے اس سعادت سے محروم ہے
    اے عوام الناس
    قر آن کو سمجھ کر ہڑھنا شروع کر لو سب پریشانیاں ختم ہو جائیں گی
    اس میں بیان کردہ اصول و ضوابط اپنی معاشرتی معاشی اور ملکی زندگیوں میں لاگو کر لو تمہارے قوانین کی بے ترتیبی ختم ہو جائے گی
    اجڑے گھر بس جائیں گے اور بے قرار دلوں کو قرار مل جائے گا
    وہ نہ ہو
    دنیا کا کھیل تماشا ہمیں غافل کر دے اور ہم بھی اس جماعت سے ہو جائیں جو قرآن تو پڑھتے ہیں لیکن ان کے حلق سے نیچے نہیں اترتا
    اے مالک المک ہمیں کما حقہ اس مقدس کتاب کے مطابق اپنی زندگی کزارنے کی توفیق عطا فرما
    آمین​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    آمين ، ماشاء اللہ بہت خوب ، ليكن سسٹر قرآن مجيد كے ساتھ ساتھ فلسفے اور نفسيات كو بھی پڑھا جا سكتا ہے۔
     
  3. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    4,974
    جی بالکل قرآن و حدیث جس قسم کی نفسیات و زہین سازی بیان کرتے ہیں، اس کو ضرور پڑھنا چاہیے۔

    ہاں فلسفہ ایک علیحدہ چیز ہے۔ جس کو یا جس کے قدیم و جدید نظریات کو قرآن کے ساتھ کیسے ریلیٹ کیا جا سکتا ہے، یہ دیکھنے کی ضرورت ہے۔ اس پر شاید فلسفہ ومنطق کے ماہر علماء کچھ روشنی ڈال سکیں۔
     
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    بھائى ايك مسلمان كو قرآن مجيد كافى ہے ليكن جديد فلسفے كو جانے بغير آپ نہ تو كفار اور ملحدين كو سمجھ سكتے ہيں نہ ان كا رد كر سكتے ہيں ۔
     
  5. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    4,974
    شاید ہم دونوں ایک ہی بات کر رہے ہیں۔ اس لیے الجھنے کا کوئی فائدہ نہیں!!!

    ویسے ایک بڑی اہم کتاب اس حوالے سے نظر سے گزری۔ عقلیات ابن تیمیہ از مولانا حنیف ندوی رحمہ اللہ۔
     
  6. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,432
    السلام علیکم ۔
    میرا خیال ہے کہ نفیسات پڑھنے میں تو کوئی مسئلہ نہیں‌ ہونا چاہے ، لیکن قدیم اور جدید فلسفہ ومنطق کو صرف وہی علماء پڑھیں جو کہ قرآن و حدیث میں متمکن ہیں‌ اور دعوتی میدان سے منسلک ہیں‌۔عام آدمی کو اس سے دور ہی رہنا چاہے ۔ اللہ اعلم ۔
     
  7. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,758
    ماشاء اللہ بہت خوب
     
  8. irum

    irum -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏جون 3, 2007
    پیغامات:
    31,582
    ماشاءاللہ ،بہت خوب، جزاکم اللہ خیرا
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں