درجہ حرارت

مخلص1 نے 'موسم' میں ‏دسمبر 22, 2012 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. مخلص1

    مخلص1 -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جنوری 25, 2010
    پیغامات:
    1,038
    سکردو میں درجہ حرارت منفی گیارہ کو پہنچ گیا
     
  2. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    ٹمپریچر منفی ڈگری ہو یا 50 ڈگری جو جہاں رہتا ھے اس کا جسم وہاں کے ٹیمپریچر کے مطابق برداشت کی ہمت بھی رکھتا ھے۔

    جن ممالک میں سخت دھوپ ہو اور درجہ حرارت 50 یا اس سے اوپر ہو وہاں پر سارے کام و کاروبار معمول کے مطابق ہوتے ہیں اسی طرح جن ممالک میں برفباری ہوتی ہو یا بارشیں رہتی ہیں وہاں بھی روزانہ کے کام معمول کے مطابق رہتے ہیں۔
     
  3. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,758
    صحیح کہا کنعان بھائی جو جہاں رہتا ہے وہاں کے موسم کا عادی ہوتا ہے ، اُن کے لیے معمول کی بات ہے یہ
     
  4. Ishauq

    Ishauq -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 2, 2012
    پیغامات:
    9,614
    متفق..... کنعان بھائی
    50 ڈگری سیلسیئس میں بھی لوگوں کو دھوپ میں ننگے پاؤں چلتے دیکھا ہے.
    البتہ پاکستان میں موسم کی شدت سے روزمرہ کے کاموں پر فرق پڑتا ہے، سہولیات اس پیمانے کی نہی ہوتیں.
     
  5. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    السلام علیکم

    بھائی ابوظہبئی میں اس ٹمپریچر میں مساجد کے باہر جمعہ سڑک پر ہی کھڑے ہو کر پڑھ لیتے تھے۔

    میں پہلی مرتبہ جب انگلینڈ میں آیا تو ایک دوست کے ہاں ٹھہرا، وہ کسی اوپن مارکیٹ میں‌ ریڈیمیڈ دکان لگاتا تھا جو سٹیل راڈ اور پیراشوٹ کپڑے سے 30 منٹ میں تیار ہوتی تھی۔ ایک دن میں‌ اس کے ساتھ گیا اور کچھ دیر بعد بارش ہونے کے امکانات نظر آئے تو میں نے دوست کو کہا کہ دکان کب سمیٹنی ھے، دوست نے کہا کیوں، میں نے کہا کہ بارش ہونے والی ھے، اس نے کہا گرمیوں میں الامارات کا ٹیمپریچر کتنا ہوتا ھے، میں‌ نے اسے وہاں کا ٹمپریچر بتایا تو اس نے کہا کیا اس ٹمپریچر میں وہاں سارے کاروبار بند ہو جاتے ہیں جس پر میں‌ نے کہا نہیں تو اس نے کہا اسی طرح یہاں بھی سردی، آندھی بارش برفباری ہو تمام کام اسی طرح روٹین میں چلتے رہتے ہیں تم دیکھنا بارش ہو گی اور لوگ شاپنگ کر رہے ہونگے، تو کچھ دیر بعد ایسا ہی ہوا بارش شروع ہوئی اور لوگوں نے چھتریاں پکڑی ہوئی تھیں اور سارے کام معمول کے مطابق ہو رہے تھے۔

    والسلام
     
  6. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,450
    حالیہ بارشوں کے بعد مکہ مکرمہ کا درجہ حرارت رات کو بیس اور دن کو بعض اوقات تیس ڈگری سینٹی گریڈ تک ہو جاتا ہے۔
     
  7. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    پھر بھی اسے درجہ حرارت کہتے ہیں ؟
     
  8. Ishauq

    Ishauq -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 2, 2012
    پیغامات:
    9,614
    جی بالکل، گرمی یا سردی کی پیمائش کو درجہ حرارت ہی کہتے ہیں.
     
  9. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    وہ درجہ حرارت جس میں کوئی مائع، ٹھوس حالت میں تبدیل ہو جائے اس درجہ حرارت کو اس مائع کا نقطہ انجماد کہتے ہیں۔

    پانی کا نقطہ انجماد 0°c اور نقطہ پگھلاؤ 100°c ہوتا ھے۔
     
  10. Ishauq

    Ishauq -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 2, 2012
    پیغامات:
    9,614
    جی بالکل،
    اور حرارت ، کسی بھی چيز کے مالیکولز کی اوسط حرکی توانائی کو کہتے ہیں.
    -273 ڈگری سینٹی گریڈ وہ درجہ حرارت ہے جس میں مالیکیولز کی حرکت ختم ہو جاتی ہے. یہ درج حرارت ابھی تک حاصل نہی کیا جا سکا.
     
  11. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    عمل انگیز سے
     
  12. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,758
    جی ایسا ہی پڑھا اور سُنا ہے کہ

    -273 سردی کی حد ہے اور گرمی کا درجہ حرارت کوئی نہیں مطلب اس کی شدت کوئی نہیں اور نہ ہی مخصوص تعداد اب تک بتائی جا سکی ہے لیکن ابھی -273 یہ بھی کہیں سے ابھی تک ملا نہیں۔

    مجھے اُس ملک کا نام تو یاد نہیں آرہا لیکن سُنا ہے کہ ایک ملک ایسا ہے جہاں اگر کوئی انسان چلا جائے چاہیے اپنے ساتھ کتنی ہی احتیاطی تدابیر لر جائے وہاں کے درضہ حرارت کو برادشت نہیں کر سکتا اور جم جاتا ہے وہاں‌کسی بھی قسم کی مشینری بھی کام نہیں کرتی ، کیا کسی کو پتہ ہے کہ اُس جگہ کا نام کیا ہے ؟
     
  13. Ishauq

    Ishauq -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 2, 2012
    پیغامات:
    9,614
    کنیڈا، سائبیریا وغیرہ میں کسی کسی مقام کا درجہ حرارت -40 جا پہنچتا ہے. یہ بات آباد علاقے کی ہو رھی ہے.
    باقی غیر آباد علاقے قطبین وغیرہ کا درجہ حرارت اس سے بھی نیچے چلا جاتا ہے.
    -210 ڈگری سینٹی گریڈ کو تو ہم بھی ڈ یل کر رھے ہیں.
     
  14. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    السلام علیکم

    ساجد بھائی آپکو جواب دینے کے لئے کچھ مزید باتوں پر بھی روشنی ڈالنی پڑے گی۔

    انگلینڈ میں جتنے بھی پرانے گھر بنائے جاتے ہیں وہ لکڑی کے ہوتے ہیں اور چھتیں نوک دار یعنی اوپر کے کمرے کی چھت سے اوپر ارچ تک کا حصہ خالی ہوتا ھے وہ اس لئے کے اوپر سے سردی کا کنٹرول زیادہ ہو۔ دیواروں پر بہت سے کمیملز سے اسے فل کیا جاتا ھے تاکہ سردی کو روکا جا سکے اور اسی طرح زمین کا فرش سے نیچے تیہہ خانے بنائے جاتے تھے اور ان تیہہ خانوں میں کوئلے جلائے جاتے تھے جس سے اوپر گھر گرم رہتا تھا۔

    اب کوئلوں سے گرم کرنے والا نظام ختم ہو گیا ہوا ھے اور نیا سسٹم ہر گھر میں نصب ھے جسے "سینٹرل ہیٹنگ" کہتے ہیں۔ سینٹرل ہیٹنگ اسطرح کام کرتی ھے کہ ہر کمرے میں کنڈنسر پلیٹیں نسب ہوتی ہیں اور جسے ایک پائپ کے ذریعے سیریل کنکشن سے بوائلر سے ملایا جاتا ھے۔ اس کا کام کرنے کا عمل اسطرح ھے کہ بوائلر کے ایک پائپ سے گرم پانی کنڈنسر پلیٹوں میں بہت تیزی سے حرکت کرتا ہوا دوسرے پائپ سے واپس آتا ھے اور کنڈنسر سے سے حرارت خارج ہوتی ھے۔ یہ ایک مکمل سیف سسٹم ھے اس سے آگ والا کوئی خطرہ نہیں۔

    کینیڈا کے علاوہ روس کی بھی کچھ سٹیٹس ہیں اور آئس لینڈ یورپ میں اور بھی بہت سے ممالک ہیں جہاں سردی کا کا درجہ حرارت منفی 25 ڈگری سی تک یا اس سے بھی زیادہ ہوتا ھے مگر وہاں بھی لوگ جمتے نہیں بلکہ "برانڈی" کا استعمال کرتے ہیں۔ اور مسلم ڈرائی فروٹ اور چائے و کافی کا استعمال کرتے ہیں۔

    میرا بھائی اسی موسم میں کینیڈا گیا تھا سیر کرنے اور وہ پورا ہفتہ ہوٹل سے باہر نہیں نکلا وہیں سے واپس آ گیا تھا۔ اس نے بتایا کہ ہوٹل کے کمرے میں چاروں کونوں میں ہیٹر چل رہے تھے اور بچاؤ تھا مگر جب باہر نکلنے لگتا تھا تو جمنے لگتا تھا اور ہوٹل میں واپس آ جاتا تھا۔ اس کی وجہ یہ ھے کہ گلف کے بوئلنگ ٹمپریچر سے فریزنگ ٹیمپریچر میں آئیں تو ایسا ہی ہوتا ھے۔ جب وہاں کے مقامی ہو جائیں تو جسم پھر اسی کے مطابق ڈھل جاتا ھے۔

    پاکستان میں جب گھر بنائے جاتے ہیں تو ان میں سردی اور گرمی پر کوئی سیفٹی سسٹم موجود نہیں ہوتا جس وجہ سے گرمیوں میں اوپر کے کمرے بہت گرم ہوتے ہیں کیونکہ اوپر کی چھتوں میں لگے سریا اور کنکریٹ سورج کی حرارت ملنے سے مزید گرم ہو جاتے ہیں جس سے اوپر کے کمرے دن کو استعمال میں نہیں لائے جاتے۔ اور نیچے کا حصہ ٹھنڈا ہوتا ھے۔ مگر سردیوں میں‌ پورا گھر استعمال میں لایا جاتا ھے کیونکہ سردی میں گزارا ہو جاتا ھے۔

    پرانے گھر جب بنائے جاتے تھے تو اس وقت دیواروں میں مٹی سے چنائی کرواتے تھے اور چھتیں لکڑی اور مٹی سے بنواتے تھے تاکہ سارا گھر گرمی میں‌ خاص استعمال میں‌ لایا جائے مٹی اور لکڑی پر گرمی کا اثر بہت کم ہوتا ھے۔

    والسلام
     
  15. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,758
    جی پاکستان میں‌ایسا ہی ہوتا ہے گھروں کو سردی اور گرمی سے بچانے کے لیے کوئی تدابیر استعمال کی نہیں‌جاتی ہیں ، باہر کے ملکوں میں تو گھر لکڑیوں کے ہی بنائے جاتے ہیں جیسا کہ آپ نے اوپر ڈیٹیل میں‌بتایا ہے۔
     
  16. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855

    مشرقی یورپ: شدید سردی سے دو سو بیس ہلاک​



    آخری وقت اشاعت: پير 24 دسمبر 2012 ، ‭ 17:30 GMT 22:30 PST



    گزشتہ سال بھی یوکرائن، پولینڈ اور فرانس میں شدید سردی کے باعث سینکڑوں افراد ہلاک ہوگئے تھے

    مشرقی یورپ میں شدید سردی کی وجہ سے رواں ماہ کم از کم دو سو بیس افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔ بیشتر ہلاکتیں ان علاقوں میں ہوئیں جو سابق سویت یونین کا حصہ تھے۔

    روس میں درجۂ حرارت اوسط کے مقابلے میں تقریباً دس سے پندرہ فیصد کم ریکارڈ کیا گیا ہے جبکہ
    سائیبیریا میں درجۂ حرارت منفی پچاس ڈگری سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے۔

    سائیبیریا میں کم از کم اڑسٹھ افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔

    جمعہ کو یوکرین سے تراسی جبکہ پولینڈ سے انتالیس ہلاکتوں کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

    مشرقی یورپ کے موسم میں بہتری کی توقع ہے اور ماسکو میں جمعرات تک درجۂ حرارت صفر ڈگری تک پہنچنے کی امید ہے۔

    موسمی شدت کی وجہ روس اور قزاکستان کے اوپر ہائی پریشر فرنٹ بتایا جا رہا ہے۔

    یورپ میں ہلاک ہونے والے زیادہ تر افراد بے گھر لوگ تھے جبکہ پولینڈ میں بیشتر ہلاکتوں کی وجہ عمارتوں کو گرم رکھنے کے لیے غیر میعاری نظام کا استعمال ہے۔

    واضح رہے کہ گزشتہ سال بھی یوکرائن، پولینڈ اور فرانس میں شدید سردی کے باعث سینکڑوں افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

    ادھر برطانیہ کے مختلف علاقوں میں شدید بارشیں جاری ہیں اور کئی علاقوں میں سیلابی ریلوں سے متعلق تنبیہ جاری کی گئی ہے۔

    ح
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  17. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,855
    السلام علیکم

    گرمی کا درجہ حرارت موسم کے لحاظ سے 52°c کے قریب تک ہوتا ھے۔ اور 1922 میں لیبیا سے درجہ حرارت 58° C ریکارڈڈ ھے۔ مگر عرب ممالک میں گرمیوں میں عام طور پر درجہ حرارت 48° C کے قریب تک ہوتا ھے اور اگر درجہ حرارت 50° C ڈگری ہو تو قانون ھے کہ حکومت چھٹی دے گی مگر محکمہ موسمیات والے 9۔49°C ہی بتاتے ہیں تاکہ چھٹی نہ دینی پڑے اور آپ کے گھر کا ٹیمپریچر میٹر 50°C سے کچھ پوائنٹس اوپر بتا رہا ہو گا۔

    لکڑی کی آگ سے حاصل ہونے والا اور گیسوں سے حاصل ہونے والا ٹیمپریچر کی ریٹنگ مختلف ھے اور پھر کسی بھی ایکپیریمنٹ پر جتنے ٹمپریچر کی ضرورت ہو اسے عمل انگیز سے اس ٹمپریچر کو بڑھایا بھی جا سکتا ھے۔

    والسلام
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں