ہم نے اس دور غلامی سے نفرت کی ہے

جواد نے 'شعری مجلس' میں ‏مئی 18, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. جواد

    جواد رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 21, 2013
    پیغامات:
    27
    ہم نے اس دور غلامی سے نفرت کی ہے
    ہم بھی مجرم ھیں کہ ھم نے بغاوت کی ہے

    ہم پے یہ الزام نہ ھو گا حشر کے روز
    کہ ھم نے کفار کے اماموں کی حمایت کی ہے

    یہ جو تبدیلی کے دعوے ھیں بڑی دیر سے ہیں
    موقع ملنے پر ھر حکم نے ذلالت کی ہے

    بیچ کھائے جو قوم کی عزت سکوں کے عوض
    تم نے بھی ان ابن غلاموں کی عبادت کی یے

    تم بھی ملت کی تباھی میں ھو برابر کے شریک
    تم نے بھی اغیار کے سانپوں کی حمایت کی ہے

    یہ نہ سمجھو کہ کوئی پرسش احوال نہ ھو گی
    وقت پڑنے پر طوفانوں نے قیامت کی یے

    انقلاب آئے گا اور ھر ظلم مٹ جائے گا
    رحمت خداوند نے ہر دور میں عنایت کی یے!!!
     
    • دلچسپ دلچسپ x 1
  2. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,367
    بہت خوب..
    انقلاب. تبدیلی، کم عقل ،جذباتی، لوگ بذریعہ شارٹ کٹ لانے کی کوشش کرتے ہیں. جنہیں قبضہ گروپ کندھا دیتا ہے. پھر جب انقلاب انتہا کے قریب ہوتا ہے تو قبضہ گروپ کا ہاتھ روک دیا جاتا ہے،.. بے چارے انقلابی. یہ تو غضب خداوندی ہوا.. : )
    اللہ ہدایت دے
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں