رمضان میں قرآن کی کونسی تفسیر منتخب کی جائے ؟

ابوعکاشہ نے 'ماہِ رمضان المبارک' میں ‏جون 30, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. حافظ عبد الکریم

    حافظ عبد الکریم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏ستمبر 12, 2016
    پیغامات:
    548
    وایاک
    تیسیر الرحمن لبیان القرآن بہتر ہے
    وایاک
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,350
    السلام علیکم!
    @حافظ عبد الکریم
    شیخ جلال الدین قاسمی کی تفسیر کا سوشل میڈیا پر کافی چرچا ہے . کیا پی ڈی ایف میں دستاب ہے. اور اہل علم کی اس حوالے سے کیا رائے ہے؟
     
  3. ابو حسن

    ابو حسن محسن

    شمولیت:
    ‏جنوری 21, 2018
    پیغامات:
    431

    " القرآن تدبر و عمل " نامی کتاب کو اسی بنیاد اور ذہن کے ساتھ مرتب کیا گیا ہے، جس کے ذریعے چھوٹوں بڑوں کو تدبر قرآن کی مشق کرائی جاسکتی ہے، اور ان میں عمل بالقرآن کا مزاج پیدا کیا جاسکتا ہے۔

    [​IMG]


    یہ باقاعدہ ایک نصابی کتاب ہے، جس میں قرآن کریم کے ہر صفحے میں موجود آیات کا مفہوم، مشکل الفاظ کے معانی موجود ہیں، اس سے حاصل ہونے والی رہنمائی کا بیان ہے، اور ساتھ سوال دیے ہوئے ہیں، تاکہ قاری اس کا جواب سوچتے ہوئے محسوس کرسکے کہ اس نے اس آیت یا آیات سے کوئی سبق حاصل کیا ہے کہ نہیں؟

    پھر ایک الگ خانے میں ہر صفحے میں موجود آیات سے جو عملی پہلو سامنے آتے ہیں، انہیں درج کیا گیا ہے کہ قاری کو ان آیات کو پڑھنے کے بعد درج ذیل نیک اعمال کرنے چاہییں، وغیرہ۔

    ’القرآن تدبر و عمل‘ کے طریقہ کار کو سمجھنے کے لیے سورہ فاتحہ سے مثال:
    سورہ فاتحہ پر غور وفکر کرنے کے لیے سات نکات بیان کیے گئے ہیں:

    1۔ الحمد للہ میں حمد باری تعالی کو صرف اللہ کے لیے خاص کیا گیا، اور آگے اس کی توجیہ بیان گئی کہ اگر تم کسی کی ذات و نام سے متاثر ہوتے تو اللہ تعالی سے متاثر ہو جاؤ، اگر کسی کے انعام و اکرام کی وجہ سے اس کی تعریف کرتے ہو ’رب العالمین‘ اس کا مستحق ہے، اگر مستقبل میں کسی سے خیر کی امید رکھتے ہوئے یہ کرتے تو ’الرحمن الرحیم‘ یعنی قیامت کے دن تک رحیم و شفیق ذات کی تعریف کرو، اور اگر کسی کی قوت و طاقت سے ڈرتے ہو اس ذات کی تعریف کرو جو ’مالک یوم الدین‘ ہے۔

    ان چار باتوں کو بیان کرنے کے بعد آگے سوال دے دیا گیا کہ اللہ تعالی حمد کا کیوں مستحق ہے؟

    اور آگے جواب کے لیے خالی سطریں چھوڑ دی گئی ہیں۔ جہاں ظاہر اوپر بیان کردہ چار باتیں ہی لکھنی ہیں۔

    2۔ ابن قیم کی نکتہ رسی نقل کی گئی ہے کہ سورہ فاتحہ میں انسان اللہ تعالی کے اسماء وصفات کو ذکر کرکے، اپنے موحد ہونے کا اقرار کرتا ہے، اور پھر اللہ تعالی سے ہدایت کی دعا کرتا ہے، اور یہ دونوں چیزیں ایسی ہیں کہ ان کا وسیلہ دے کر دعا رد نہیں ہوتی۔

    پھر سوال: قبولیت دعا کے کون سے دو وسیلے یہاں ذکر ہوئے ہیں؟

    ایاک نعبد وإیاک نستعین میں عبادت میں توحید کا اقرار کے بعد استعانت میں بھی توحید کا اقرار کیا گیا ہے، حالانکہ استعانت بھی عبادت کی شکلوں میں سے ہی ایک شکل ہے؟ جواب دیا گیا کہ استعانت کو اس کی اہمیت کے پیش نظر الگ سےبیان کیا، کیونکہ تمام عبادات اور اوامر ونواہی میں حکم الہی کی پیروی بھی اس سے استعانت کے بعد ہی ممکن ہے۔

    یہاں پھر سوال ہے۔

    4۔ اگلا نکتہ یہ بیان کیا گیا ہے کہ اللہ تعالی نے عبادت کا حکم دینے سے پہلے اپنی الوہیت و ربوبیت کو بیان کرکے اپنا مستحق عبادت ہونا بیان کیا ہے، تاکہ سمجھ آجائے کہ کیوں صرف اللہ ہی عبادت کا مستحق ہے۔

    یہاں بھی سوال کہ اللہ تعالی ہی عبادت کا مستحق کیوں ہے؟

    نعبد میں جمع کا صیغہ اس بات کی طرف اشارہ ہے کہ نماز کا ایک بنیادی مقصد اجتماعیت ہے۔

    یہاں بھی سوال ہے۔

    6۔ اگلا نکتہ اللہ تعالی سے دعا مانگتے ہوئے صرف ہدایت طلب کرنے پر اکتفا کیا گیا ہے، دنیا کی کامیابی ، ترقی اور رزوق وغیرہ نہیں مانگا گیا، کیونکہ ہدایت ان سب سے اہم ہے، اور جب ہدایت مل جاتی ہے یہ چیزیں بھی خود بخود مل جاتی ہیں، ومن یتق اللہ یجعل لہ مخرجا ویرزقہ من حیث لایحتسب۔

    یہاں پھر سوال ہے۔

    صراط مستقیم کے حوالے سے آخری نکتہ یہ بیان کیا گیا کہ انسان دنیا میں جس قدر ’صراط مستقیم‘ پر گامزن رہے گا، آخرت میں ’پل صراط‘ اسی قدر آسان ہوگا۔

    یہاں بھی سوال ہے۔

    سورہ فاتحہ سے واضح ہونے والے عملی پہلو:
    1۔ اس سے ہمیں اللہ سے دعا کی ترغیب ملی ہے، اور دعا کا طریقہ بھی سمجھ آیا کہ اللہ تعالی کی حمد وثنا سے ابتدا کرنی ہے۔

    2۔ فاتحہ قرآن کی سب سے عظیم اور بار بار پڑھی جانے والی سورت ہے، لہذا اسے سمجھنے کی زیادہ سے زیادہ کوشش کی جائے، کتب تفاسیر کھول کر اس کے معانی و مفاہیم پر اور زیادہ غور و فکر کیا جائے۔

    3۔ نیک و صالح لوگوں کو تلاش کریں، اور ان کی صحبت ومجلس اختیار کریں، کیونکہ ایسے لوگ ’انعمت علیہم‘ کا مصداق ہوتے ہیں۔

     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • مفید مفید x 1
  4. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,350
    اچھی کتاب ہے. ایک مکتبہ میں دیکھی تھی.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں