اپنے تجربے سے بتائیں-

ام محمد نے 'مَجلِسُ طُلابِ العِلمِ' میں ‏جنوری 31, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,123
    اس تھریڈ میں آپ نے اپنے سےتجربےبتانا ہے کہ پڑھنا مشکل ہے یا پڑھانا ؟
    ہماری ایک ٹیچر فرما رہی تھیں کہ آپ جیسے اپنے استاد کے شاگرد ہوں گے ویسے ہی آپ کو مستقبل میں شاگرد ملیں گے کیا یہ ٹھیک ہے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. عفراء

    عفراء webmaster

    شمولیت:
    ‏ستمبر 30, 2012
    پیغامات:
    3,919
    جو کام سر پر پڑا ہو وہی زیادہ مشکل لگتا ہے!
    ویسے پڑھانا زیادہ ذمہ داری کا کام ہے کیونکہ آپ پر زیادہ لوگوں کی ذمہ داری پڑ جاتی ہے جبکہ پڑھنے میں صرف اپنی ہی ہوتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  3. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,720
    پڑھنا زیادہ مشکل نہیں‌ جتنا پڑھانا مشکل ہوتا ہے ۔ اگر اپنی پڑھائی کرنی ہے تو صرف پڑھنا اور یاد کرنا پڑتا ہے لیکن جب بات پڑھانے کی آتی ہے تو پہلے خود پڑھو اور پھر کسی کو پڑھائو ، پھر پڑھاتے وقت کراس سوال و جواب بھی ہوتے ہیں اُس کے لیے بھی تیار رہنا پڑتا ہے

    میں اس بات سے اتفاق نہیں‌کرتا ہوں کیونکہ ایسی باتیں‌ وہی لوگ کرتے ہیں‌جن کے ساتھ یہ معاملے ہوتے ہیں ہر کسی کے ساتھ ایسا نہیں ہوتا ، اُن کا تجربہ اُن کے حساب سے ٹھیک ہو گا مگر سب کے بارے میں‌رائے دینا میں‌اس سے اتفاق نہیں کرتا۔
     
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,070
    پڑھنے میں اپنی عاقبت کی فکر ہوتی ہے اور پڑھانے میں آپ جہاز کے کپتان ہوتے ہیں سب کی عاقبت کی فکر ہوتی ہے۔ اس لحاظ سے پڑھانا مشکل ہے۔
    پھر ہمارے اتنے اچھے ٹیچرز کو ہم کیوں ملے؟ : )
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,123
    متفق
    یعنی پڑھانا زیادہ مشکل ہے ۔
    اللہ تعالی ہمیں اچھا شاگرد اور اچھا استاد بنائے۔آمین یا رب العالمین ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. عفراء

    عفراء webmaster

    شمولیت:
    ‏ستمبر 30, 2012
    پیغامات:
    3,919
    کچھ لوگ اپنی طالبعلمی کے زمانے میں نالائق ہوتے ہیں لیکن استاد بہت اچھے ثابت ہوتے ہیں اور محنت سے پڑھاتے ہیں۔ہمارے سامنے ایسی کئی مثالیں ہیں۔
    کچھ دن قبل کسی مضمون میں بھی یہ بات پڑھی تھی کہ وہ لوگ چاہتے ہیں کہ جو غلطیاں ہم نے کی وہ ہمارے شاگرد نہ کریں لہذا زیادہ محنت کرتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  7. ابن قاسم

    ابن قاسم محسن

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2011
    پیغامات:
    1,717
    مجھے کسی موضوع کو سمجھنے میں خاصا وقت لگتا ہے۔ ایسی چیزیں جو دوسرے لوگ آسانی سے سمجھ جاتے ہیں مجھے سمجھنے میں ذرا دقت ہوتی ہے۔ دو سے تین سورسس سے ریفر کرتا ہوں تاکہ موضوع کو پوری طرح سمجھ سکوں۔
    عام طور پر مشکل موضوعات کو پریزینٹیشن کے لیے قبول کرتا ہوں اور اچھا پریزینٹیشن میرا ہی ہوتا ہے الحمدللہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  8. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,239
    پڑھانا آسان ہوتا ہے، اگر پڑھانے والے کو اپنے مضمون پر مکمل دسترس حاصل ہو اور وہ اپنے شاگردوں کی مکمل تشفی کر سکے، جبکہ پڑھنا مشکل ہوتا ہے کہ پڑھنے والے کے لئے ہر بات نئی ہوتی ہے۔ یا پہلے سے معلوم بات سے مختلف ہوتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  9. مون لائیٹ آفریدی

    مون لائیٹ آفریدی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏ستمبر 22, 2007
    پیغامات:
    4,808
    ظاہر کہ پڑھانا زیادہ مشکل کام ہے ۔
    البتہ اس کا یہ فائدہ ہے کہ خود بھی پڑھنے کا موقع ملتا ہے جس سے علم اور معلومات میں اضافہ ہوتا ہے ۔
     
  10. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,154
    کسی حد تک ، زیادہ نہیں ،شاید ٹیچر کا یہاں کچھ اورمقصد ہو ، لیکن جب طالب علم کسی سے ملتا ہے یا کہیں کسی اہل علم کی مجلس میں شریک ہوتا ہے ،تو اس سے یہ ضرور پوچھا جاتا ہے کہ " کس کے شاگرد" رہے ہو ـ یہ تو کوئی بھی نہیں پوچھتا کہ تم اپنے استاد کے کیسے شاگرد تھے ـ اچھے ، لائق اور راسخ العلماء و اساتذہ کا اپنے شاگردوں پر گہر ا اثر ہوتا ہے ـ ان کی شخصیت پر ، علم پر ، اخلاق ،غرض ہر لحاظ منفرد رہتے ہیں ـ
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں