وَلَا يَخَافُوْنَ لَوْمَۃ لَائم:

ساجد تاج نے 'اردو یونیکوڈ کتب' میں ‏اپریل 5, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,720
    وَلَا يَخَافُوْنَ لَوْمَۃ لَائم: "کسی ملامت کرنے والے کی ملامت سے نہ ڈریں گے۔"


    اس چھٹی صفت سے مراد یہ ہے کہ حزب اللہ میں شامل لوگوں کو اللہ کے دین کی پیروری کرنے میں، اس کے احکامات پر عمل درآمد کرنے میں اور دین کی رو سے حق کو حق اور باطل کو باطل کہنے میں کوئی عار نہ ہوگا۔ معاشرے میں جن بُرائیوں کا زور ہو گا اس کے خلاف وہ اپنی آوازیں بلند کریں گے ۔ اگر ہم اپنے معاشرے میں نظر دوڑائیں تو کتنے ہی لوگ ایسے ہیں جو بُرائی، معصیت ِ الہی اور معاشرتی خرابیوں اور غیر اسلامی کلچر مثلا مہندی ، مایوں، ویلنٹائن ڈے یا بدعات مثلا میلا ، سوئم ، چالیسواں ، کونڈے وغیرہ سے دامن بچانا چاہتے ہیں مگر ملامت گرون کا مقابلہ کرنے کی ہمت اپنے اندر نہیں پاتے، دوستوں کا دبائو، معاشرتی دبائو کا شکار ہو جاتے ہیں۔ جس کی وجہ سے برائیوں سے بچنے کی توفیق سے ہی محروم رہ جاتے ہیں۔
    جب بھی جہاد فی سبیل اللہ کا آغاز ہوتا ہے تو اس جدوجہد کے راستے میں دو قسم کی مخالفتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

    1: شدید مخالفت

    یہ مخالفت دشمنوں کی طرف سے آتی ہے ۔ اس مخالفت کا سامنا نسبتا آسان ہوتا ہے کیونکہ دُشمن پہلے ہی اچھا نہیں لگتا اس لیئے اس کے مقابلے میں ڈٹ جانا ذرا بھی مشکل نہیں لگتا۔

    2: لوگوں کی ملامت:


    اس کے برعکس دین کے راستے میں جب اپنے لوگوں کی طنزیہ نظریں، تنقید ، آنکھوں میں اجنبیت ، استہزا اور ملامت کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو انسان کے قدم ڈگمگانے لگتے ہیں۔ یہ جو رشتے کل تک محبتوں کے خزانے نچھاور کر رہے ہوتے ہیں آج پاس آنے سے بھی گھبراتے ہیں۔ وہ ہمدردی کے نام پر واپس اپنی دنیا کی طرف کھینچنا چاہتےہیں۔ ان کے تبصرے کچھ اس طرح کے ہوتے ہیں کہ:

    کیا ہو گیا ہے تمھیں؟
    یہ تم نے اپنا کیا حال بنالیا ہے؟
    تم نے تو خاندان میں اختلاف ڈال دیا ہے۔
    تم نے تو اجنبیت پیدا کر دی ہے۔
    اتنے قریبی رشتہ دار ہیں اب تم ان سے بھی پردہ کرو گی؟
    انسان کو اتنا انتہا پسند نہیں ہونا چاہتے۔

    لوگوں کا یہ ردعمل انسان کو ہلا دیتا ہے۔ دراصل لوگ اللہ کا حق بھی لینا چاہتے ہیں۔ جب تک آپ انہیں اللہ کے حصے کا بھی حق نہ دے دیں تو وہ برابر آپ کو ملامت ہی کرتے رہیں گے۔ یہاں قرآن ہمارے قدم جما رہا ہے کہ اصل مومن تو وہ ہیں جو کسی ملامت کرنے کی ملامت کی پروا نہیں کرتے۔ وہ تمام لوگوں کے حقوق ادا کرتے ہیں لیکن حکم ہر حال میں صرف اللہ کا ہی مانتےہیں۔وہ کسی کی مخالفت ، کسی کے طعن و تشنیع ، کسی کے اعتراض ، کسی کے استہزا یا مذاق اُڑانے کی پروا نہیں کرتے۔ کسی کے منی تبصرے ان کو عمل پر پیچھے نہیں دھکیتے ۔ حجاب کرنے پر کوئی انہیں fundo یا ninja trutle کہہ دے تو وہ اس کی پراوہ نہ کرتے ہوئے استقامت سے مزید اپنے عمل پر جم جاتے ہیں۔

    لوگوں کی تنقید کو بہت اہمیت دیتا وہ دین میں آگے نہیں بڑھ سکتا۔ ذرا سی مخالفت پر رونے لگنا، غم میں مُبتلا ہو جانا، یہ منفی رویہ مومن کو زیب نہیں دیتا۔ مومن کے لوہے کے اعصاب ہوتے ہیں۔ مومن تو بدلتے حالات اور آزمائشوں کا بہادری سے مقابلہ کرتا ہے۔ وہ بے چارہ مسلمان نہیں بلکہ فخریہ مسلمان ہوتا ہے۔

    سوچیئے ! کچھ عورتیں جب اپنے جسمکی نمائش کر کے فخر محسوس کرتی ہیں تو آپ حجاب کر کے ، پردہ کر کے ، اپنے آپ کو ڈھانپ کر شرمندہ کیوں ہیں؟ ایک مومن لوگوں کو راضی کرنے والا نہیں بلکہ اللہ کو راضی کرنے والا ہے۔

    جب ہم دین میں داخل ہوتے ہیں تو ایک اور غلط نظریے کے ساتھ آتے ہیں کہ اللہ ضرور ہمارے بگڑے کام بنائے گا، لوگ ہمیں ہاتھوں ہاتھ لیں گے ، ہمیں سراہیں گے، تعریفیں کریں گے، لیکن جب لوگوں کی طرف منفی رویے کا سامنا کرنا پڑتا ہے ، مذاق اڑتا ہے اور تنقید ہوتی ہے تو ہم ششدر ہو جاتے ہیں ۔ یاد رکھیں ! دین کا راستہ پھولوں کی سیج نہیں ہے ۔ اپنے آپ کو لوگوں کی نظروں اور ان کے تبصروں سے اونچا پنے آپ کو لوگوں کی نظروں اور ان کے تبصروں سے اونچا کر لیں۔ نہ دین کے راستے میں آنے والی تعریف آپ کو تکبر میں مبتلا کرے اور نہ ہی تنقید آپ کے پائوں کی بیڑی بنے۔

    مومن تو اپنے آپ کو اللہ کی نظر سے جانچتا ہے ۔ وہ جذباتی طور پر مضبوط ہوتا ہے۔

    اللہ کس سے محبت کرتا ہے؟ (مکمل کتاب یونیکورڈ میں) - URDU MAJLIS FORUM

    کمپوزنگ برائے اردومجلس : ساجد تاج​
     
  2. توریالی

    توریالی -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏فروری 23, 2014
    پیغامات:
    434
    بہت فائدے کی حامل تحریر پیش کرنے پر اللہ کریم آپ کو برکت ا کامیبی عطا فرمائے۔ آمین
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,123
    جزاک اللہ خیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,720
  5. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,123
    یاد دہانی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں