ایران کی لبنان اور شام کے بعد عراق میں مجرمانہ مداخلت

عائشہ نے 'اسلام اور معاصر دنیا' میں ‏جولائی 11, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

Tags:
  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    بالآخر وہی ہوا جس کے متعلق پختہ کار تجزیہ کار شروع دن سے اشارہ کر رہے تھے ، داعش کے خطرے کی میڈیا پر مبالغہ آمیز نمائش اورایرانی رہنماوں کے بلند بانگ ماتم کے بعد ایران نے عراقی سرحدیں باقاعدہ پامال کر دیں ۔ سب لوگ جانتے تھے کہ داعش کی بے مہار میڈیا کوریج کھیل کا ابتدائی حصہ ہے ، نئے کردار بعد میں آنے والے ہیں اور وہ ہو چکا ہے اس وقت عراق میں ایران کی زمینی فوج موجود ہے ،کس قاعدے سے یہ مت پوچھیے ، دنیا کے کئی ممالک سے شیعہ رافضی رضاکار بھرتی کیے جا رہے ہیں اور ان سب غیر ملکیوں کو عراق میں ایران کی جنگ کا ایندھن بننے کے لیے بھیجا جا رہا ہے ۔ اب "جمہوری اسلامی ایران" کے طیارے عراق پر جہاں چاہیں بمباری کر کے جس عراقی کو چاہیں اڑا دیں ، وہ داعش کا دہشت گرد ہو گا ، بغیر کسی ثبوت ، بغیر جرم ثابت کیے انسانوں کو مارنے کا یہ کام کس قانون کی رو سے درست ہے؟ یہ کون پوچھے گا۔ چند مزاروں کی تباہی کی تصویروں کو جواز بنا کر عراق کی سرحد ہی حلال کر لی گئی ، اینٹ گارے کی عمارتوں کے انتقام میں جیتے جاگتے انسانوں کے چیتھڑے اڑیں گے ۔ ولایت فقیہ نے آج تک جو گل کھلائے ہیں ان میں یہ تازہ اضافہ ہے جس میں خون مسلم کی بو شامل ہے ۔
    ایرانی فنڈڈ ملیشیا حزب اللہ نے لبنان میں گھس کر آگ لگائی ،یہاں تک کہ وہاں کے صدر کے گھر پر راکٹ چلا دئیے ، شام کے گلی کوچوں کو معصوم شہریوں کی لاشوں سے اٹا کھنڈر بنا دیا ، اب یہ لوگ ہر بین الاقوامی قانون کو روند کر عراق میں جا گھسے ہیں ، داعش اب القاعدہ کی طرح ایک نام ہو گا جس کی آڑ میں جنگ جاری رہے گی ، نہ داعش کے جنگجو ختم ہوں گے نہ جنگ رکے گی ، نوری المالک جیسے کٹھ پتلی حکمرانوں کی ڈور ہلانے کی بجائے اب ایرانی روافض کھل کر کھیلنا چاہتے ہیں ، مسلمانوں کا خون اب جمہوری اسلامی ایران بہائے گا ۔اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے عراق کی جانب اشارہ کر کے کہا تھا فتنہ یہاں سے شروع ہو گا ۔۔۔ فتنہ عراق میں شروع ہو چکا ہے ۔۔۔
     
    عرفان محمود اوراہل الحدیث نے اس کا شکریہ ادا کیا
  2. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: ممتاز :-

    پیغامات:
    4,974
    ایک اور بات بھی ذکر کرتے چلوں، کردستان کے حوالے سے ایک بات بھی علم میں آئی کہ وہاں شیطان کے پجاری بڑی تعداد میں موجود ہیں اور اگر آپ شیطان کے پجاری نہیں ہیں تو وہ آپ کو سودا سلف تک بھی نہیں بیچیں گے بلکہ آپ سے انتہائی نفرت کریں گے۔ یہاں مجھے وہ حدیث یاد آ گئی جس میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے عراق سے شیطان کا سینگ نمودار ہونے کا ذکر کیا تھا۔

    عجیب بات ہے کہ داعش کو وہاں توحید کا علم بلند کرنے کا خیال نہ آیا!!!
     
    dani اورعائشہ نے اس کا شکریہ ادا کیا
  3. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: ممتاز :-

    پیغامات:
    4,974
    عراق میں شیطان کے پجاریوں کا ایک تعارف
    انہیں وہاں یزیدی بھی کہا جاتا ہے۔

    ربط ملاحظہ فرمائیں
     
    عائشہ نے شکریہ ادا کیا ہے.
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    جی ہمیں پہلی بار ہمارے عراقی استاد نے بتایا تھا جب نماز کے ممنوعہ اوقات کی حدیث میں شیطان کی عبادت کا ذکر آیا، انہوں نے بتایا کہ وہاں کچھ لوگ ہیں جو انہی اوقات میں سورج کی طرف منہ کر کے عبادت کرتے ہیں۔نام مجھے یاد نہیں۔
     
    اہل الحدیث نے شکریہ ادا کیا ہے.
  5. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    شام میں حالیہ جھڑپوں میں شامی فوج اور ایرانی فنڈڈ دہشت گرد تنظیم حزب اللہ کی اچھی پٹائی ہو رہی ہے ۔

    شام کے شہر حماہ میں باغیوں کی نمائندہ جیش الحر کے حملے میں سرکاری فوج اور لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے 40 جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں۔ باغیوں نے حزب اللہ کے تین اہم کمانڈروں کو حراست میں بھی لیا ہے۔

    دوسری جانب القلمون شہر میں باغیوں، سرکاری فوج، حزب اللہ اور النصرہ فرنٹ کے مابین گھمسان کی جنگ کی اطلاعات ہیں۔

    حماہ میڈیا سینٹر کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ مورک اور طیبہ چیک پوسٹوں پر سرکاری فوج اور اسد نواز حزب اللہ کے ٹھکانوں پر جیش الحر نے تابڑ توڑ حملے کیے جس کے نتیجے میں انہیں بھاری جانی نقصان پہنچایا گیا ہے۔ سرکاری فوج اور حزب اللہ کے جنگجوؤں کو شامی فضائیہ کی بھی مدد حاصل تھی تاہم باغیوں نے جنگی طیاروں کی بمباری کا بھی بھرپور جواب دیا۔

    ادھر لبنان کی سرحد سے متصل شہر القلمون میں کچھ عرصہ قبل باغیوں کے قبضے کے بعد سرکاری فوج، جیش الحر اور النصرہ فرنٹ کے درمیان ایک مرتبہ پھر لڑائی چھڑ گئی ہے۔ القلمون پر گذشتہ اپریل میں جیش الحر نے قبضہ کرتے ہوئے وہاں سے سرکاری فوج اور حزب اللہ کو نکال باہر کیا تھا۔ اطلاعات کے مطابق شہر کے ایک طرف حزب اللہ اور القاعدہ نواز النصرہ فرنٹ جبکہ دوسری جانب جیش الحر اور شامی فوج کے درمیان لڑائی جاری ہے۔

    حزب اللہ کو شامی فضائیہ کی بھی بھرپور مدد حاصل ہے تاہم النصرہ نے مخالف جنگجوؤں کو زمینی پیش قدمی سے روک رکھا ہے۔ حزب اللہ کے ذرائع کے مطابق اس نے لبنانی سرحد سے متصل القلمون میں جرود عرسال کے مقام پر باغیوں کےاہم ٹھکانے پر قبضہ کر لیا ہے۔

    باغیوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے القلمون میں حزب اللہ کو بھاری جانی نقصان پہنچانے کے بعد کئی اہم چیک پوسٹوں اور قصبوں پر دوبارہ قضہ حاصل کر لیا ہے۔ باغیوں نے بتایا کہ القلمون میں حزب اللہ کا ایک اہم فیلڈ کمانڈر سمیت کئی جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں۔

    العربیہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق حزب اللہ نے القلمون میں لڑائی کے دوران اپنے دو اہم کمانڈروں کے لاپتا ہونے کا اعتراف کیا ہے۔ حزب اللہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ قلمون میں کفر تبنیت کے مقام پر بسام طباجہ باغیوں کے حملے میں مارا گیا۔

    حزب اللہ کے ایک مقرب ذرائع کا کہنا ہے کہ القلمون میں اس کی لڑائی کا مقصد لبنان سے متصل سرحدی علاقے میں شامی باغیوں کے انفرا سٹرکچر کو تباہ کرنا ہے۔ اپوزیشن ذرائع کا کہنا ہے کہ انہوں نے شام اور لبنان کے درمیان عرسال، بریتال اور الجرود کے مقامات پر حزب اللہ کو شدید نقصان پہنچایا ہے اور انقلابی کارکن پیش قدمی کر رہے ہیں۔
    http://urdu.alarabiya.net/ur/middle-east/2014/07/17/شامی-فوج-اور-حزب-اللہ-کے-چالیس-جنگجو-ہلاک.html
     
  6. dani

    dani نوآموز.

    پیغامات:
    4,333
    [​IMG]
     
  7. dani

    dani نوآموز.

    پیغامات:
    4,333
    عرب پریس کے مطابق
    انوکھی مشابہت
    [​IMG]
     
    عائشہ نے شکریہ ادا کیا ہے.
  8. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    امریکی اخبار ورلڈ ٹرائیبون نے دعویٰ کیا ہے کہ ایران نے عراقی وزیر اعظم نوری المالکی کے مخالف جنگجوؤں کی سرکوبی کے لیے بغداد سمیت ملک کے دوسرے شہروں میں پاسداران انقلاب کے 5000 فوجی تعینات کر رکھے ہیں۔

    اخبار لکھتا ہے کہ عراق میں نوری المالکی کی حمایت اور باغیوں کے خلاف آپریشن کی براہ راست نگرانی تہران سے پاسداران انقلاب کی بیرون ملک آپریشن کی ذمہ دار ایلیٹ القدس فورس کر رہی ہے۔

    امریکی اخبار نے عراق کے ایک کرد ذریعے کے حوالے سے مزید بتایا کہ عراق میں وزیر اعظم نوری المالکی کی فوجی سرگرمیوں کی نگرانی بھی ایرانی پاسداران انقلاب کر رہے ہیں۔ اس مقصد کے لیے پاسداران انقلاب نے فوج کی پہلی کھیپ موصل پر باغیوں کے قبضے کے ایک ہفتے بعد بغداد روانہ کی تھی۔

    خیال رہے کہ عراق میں ایرانی فوج کی موجودگی کا امریکی اخبار کا دعویٰ اس نوعیت کی پہلی خبر نہیں بلکہ اس اسے قبل خود ایرانی پریس میں عراق میں مارے جانے والے فوجیوں کی تصاویر اور ان کی تدفین کی خبریں آتی رہی ہیں۔ حال ہی میں عراق کے شہر سامراء میں باغیوں کے ساتھ لڑائی میں مارے جانے والے متعدد ایرانی فوجیوں کو تہران اور دوسرے شہروں میں سپرد خاک کیا گیا ہےَ۔

    ایرانی حکومت عراق میں براہ راست فوجی مداخلت کی خبروں کی تردید کرتی آ رہی ہے لیکن عراق میں پاسدران انقلاب کے اہلکاروں کے مارے جانے کی خیریں اور ان کی تدفین کی تصاویر ایران کا سرکاری میڈیا بھی دکھاتا رہا ہے جس سے حکومت کے دعوے کی خود بہ خود تردید ہو جاتی ہے۔
    http://urdu.alarabiya.net/ur/middle...000-فوجیوں-کی-عراق-میں-موجودگی-کا-انکشاف.html
     
  9. dani

    dani نوآموز.

    پیغامات:
    4,333
    القدس کے نام پر غریبوں کے بچے بھرتی کئے اور مروا رہے ہیں عراق میں، رافضی مکاریاں دیکھو
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں