وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں پاک فوج تعینات

dani نے 'خبریں' میں ‏جولائی 26, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. dani

    dani نوآموز.

    پیغامات:
    4,333
    وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے پارلیمنٹ ہائوس میں غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی اور اسلام آباد کو سکیورٹی خدشات لاحق ہیں جس کے پیش نظر اسلام آباد میں فوج کو امن و امان نافذ کرنے کی ذمہ داری سونپی جارہی ہے۔
    وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ غیر معمولی سکیورٹی صورتحال کے پیش نظر وفاقی دارالحکومت میں یکم اگست سے تین ماہ کیلئے فوج تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس کیلئے وزارت داخلہ نے وزارت دفاع کو ریکوزیشن بھجوا دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضربِ عضب آپریشن کے ممکنہ ردعمل سے بچنے کیلئے ملک بھر میں سکیورٹی کو ہائی الرٹ کیا گیا ہے اور صوبائی حکومتوں کو خصوصی طور پر ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کیلئے پولیس اور سکیورٹی اداروں کو تیار رکھیں۔ دریں اثناء حکومتی ترجمان نے کہا ہے کہ اسلام آباد میں سول انتظامیہ کی مدد کیلئے پاک فوج طلب کی ہے۔ فوج اہم سرکاری عمارتوں کی سکیورٹی سنبھالے گی۔ پاک فوج کوئیک رسپانس فورس کے طور پر سول انتظامیہ کی مدد کریگی۔ افواج حساس اور سٹرٹیجک حکومتی عمارتوں اور تنصیبات کی سکیورٹی پر مامور ہوگی۔ فوج کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ آرٹیکل 245 کے تحت کیا گیا۔ ترجمان وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ اسلام آباد کو فوج کے حوالے نہیں کیا جارہا، فوج کو پولیس، اسلام آباد میں تحفظ، امن کی فضا مستحکم بنانے کیلئے طلب کیا گیا۔ صوبائی دارالحکومتوں میں جہاں ضرورت ہوگی، یہی طریقہ اختیار کیا جائے گا۔ فوجی دستے کوئیک رسپانس فورس کے طور پر بھی ذمہ داریاں نبھائیں گی۔ چند ہفتوں سے معاملے کا قانونی اور آئینی پہلوئوں سے جائزہ لیا جارہا تھا۔ این این آئی کے مطابق فوج کے دستے ائرپورٹ سمیت حساس مقامات پر پولیس کی معاونت کرینگے۔
    http://www.nawaiwaqt.com.pk/national/26-Jul-2014/318417
     
    بابر تنویر نے شکریہ ادا کیا ہے.
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    اللہ خیر کرے۔
     
    بابر تنویر نے شکریہ ادا کیا ہے.

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں