فطرہ میں پیسہ کی ادائیگی

سرفراز فیضی نے 'ماہِ رمضان المبارک' میں ‏جولائی 27, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. سرفراز فیضی

    سرفراز فیضی ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 6, 2012
    پیغامات:
    64
    ہمارے زمانہ میں کرنسی بھی ایک طرح سے "طعام" ہی کا بدل ہے ۔ اب اگر کوئی آدمی یہ استدلال کرے کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے سونا اور چاندی پر زکاۃ نکالنے کا حکم دیاہے ۔ اور کرنسی کیونکہ سونا چاندی نہیں ہے اس لیے اس میں زکاۃ نہیں تو اور جو لوگ کرنسی میں زکوٰۃ نکالنے کا حکم دے رہے وہ "نصوص" کی مخالفت کررہے ہیں تو اس کا آپ کیا جواب دیں گے ۔ وہی جواب ان لوگوں کا بھی ہے جو پیسہ میں فطرہ دینے کو ںصوص کے خلاف بنارہے ہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,214
    میرا خیال ہے یہ قیاس سب سے بہتر ہے ـ آجکل لوگ ''طعام'' کی ضرورت محسوس نہیں کرتے ـ ان کی دیگر ضروریات بھی ہوتی ہیں جو صرف کرنسی سے ہی پوری ہو سکتی ہے ـ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  3. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,161
    منطقی دلائل کے کئی جوابات ہو سکتے ہیں، ان پر تنقید بھی ہو سکتی ہے ، لیکن اگر سنت کو دیکھیں تو صدقہ فطر خوراک کی صور ت میں ادا کرنا ہے ۔ میرے خیال میں اس کی حکمت یہ ہے کہ خوراک انسان کی بنیادی ضرورت ہے۔ اور شریعت اسلامیہ کا مقصد یہ ہے کہ عید کے دن مسلم معاشرے کے ہر فرد کا پیٹ بھرا ہو۔ اس کی بنیادی انسانی ضرورت پوری ہو، جب کہ پیسے سے لوگ تعیشات کی طرف مائل ہو جائیں گے۔
    صنعتی انقلاب کے بعد یہ حال ہو گیا ہے کہ ہمیں ضروریات اور تعیشات کا فرق ہی بھول گیا ہے۔ کہیں لوگ ہاتھ پھیلا کر تعیشات جمع کرتے پھرتے ہیں اور کہیں خوددار سفید پوش روز عید بھوکے رہ جاتے ہیں ۔ مثلا ہمارے شہر میں کچی بستیوں سے آنے والے لوگ گھروں میں ملازمت کرتے ہیں ۔ بظاہر اتنی مسکنت طاری ہوتی ہے کہ آپ لرز جائیں ۔ عید کے روز کچھ اہل در دان کی بستیوں میں خوراک دینے پہنچے تو معلوم ہو ا کہ بجلی کی لائن پر کنڈا ڈال کر بجلی کا بھی انتظام ہے اور رمضان میں ملنے والے صدقات و زکاۃ سے ٹی وی وغیرہ کرائے پر لا کر ناچ گانے کا بندوبست کیا گیا ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  4. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,214
    بہرحال یہ اختلافی مسئلہ ہے ـ اور جائز یا ناجائز ہونے کی بات ہورہی ہے ـ یہ نہیں کہا جارہا ہے کہ کرنسی کو مطلقا خوراک کا متبادل قرار دے دیا جائے ـ کچی بستی والے لوگوں کے دونوں رخ و سکتے ہیں ـ شیخ رفیق طاھر بھائی کا تبصرہ بھی مجلس پر موجود ہے اس میں کافی وضاحت ہے ـ
    ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,214
    اس قیاس کی مخالفت کو اگر حنبیلت یا ظاہریت کا نام دیا جائے تو ہمیں ان میں شامل رکھیں کیونکہ بہت سے حنبلی اور ظاہری بھی کرنسی کے قائل ملتے ہیں ـ : )
     
  6. ابن اسماعيل

    ابن اسماعيل رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏اگست 17, 2014
    پیغامات:
    3
    السلام علیکم ورحمۃ اللہ ،برکاتہ
    محترم یہ چند قیاسی حضرات ہیں جن پر قیاس کا بھوت سوارہے ایسی تحریروں کو ایڈ کرنے سے پرہیز کرنا اس پاکیزہ فورم کے حق میں زیادہ بہترہے ہمارے لئے طریقہ سلف صالحین ہی بہتر واسلم ہے۔ویسے جہاں تک اخلاف کی بات ہے تو لوگوں نے واضح نصوص میں بھی اختلاف کررکھاہے اس کا کیاکیا جائے۔ شکریہ
     
  7. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,214
    وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    تحریر کوئی بھی ہو ،بات دلائل کی ہوتی ہے ۔ قیاس کا لفظ تومحض مزاح کے طور پر استعمال کیا گیا ۔
    یہ پڑھیں ۔
    http://www.urdumajlis.net/threads/صدقۃ-الفطر-میں-رقم-ونقد-دینے-کاحکم.37772/
     
  8. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,281
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں