ایک با غیرت شوہر

بنت امجد نے 'سیرتِ اسلامی' میں ‏مارچ 22, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. بنت امجد

    بنت امجد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 6, 2013
    پیغامات:
    1,570
    بسم اللہ الرحمن الرحیم​

    ایک با غیرت شوہر

    وہ مکمل پردے کے عالم میں قاضی کے سامنے کھڑی تھی۔ اس نے اپنے شوہر کے خلاف مقدمہ دائر کر رکھا تھا ۔ مقدمہ کی نوعیت بڑی عجیب تھی۔ عورت کا دعوی تھا : میرے خاوند کے ذمہ مہر کی رقم (۵۰۰) دینار واجب الاداء ہے ، وہ ادا نہیں کر رہا۔ لہذا مجھے مہر کی رقم دلوائی جائے۔ قاضی نے خاوند سے پوچھا تو اس نے اس دعوی کا انکار کیااور کہا : اس کے ذمہ عورت کی کوئی رقم نہیں ۔ عدالت نے گواہ طلب کیے۔

    خاتون نے چند گواہوں کو پیش کیا ۔ گواہوں نے کہا کہ ہم اس خاتون کا چہرہ دیکھ کر ہی بتا سکتے ہیں کہ واقعی ہی یہ وہ عورت ہے جس کی گواہی کے لیے ہم یہاں آئے ہیں ، لہذا عورت سے کہا جائے کہ اپنے چہرے سے پردہ ہٹائے تا کہ ہم اس کی شناخت کر سکیں۔

    عدالت نے حکم دیا عورت گواہوں کے سامنے چہرہ سے نقاب ہٹائے تا کہ شناخت کر سکیں۔ ادھر عورت تذ بذب کا شکار تھی کہ گواہوں کے سامنے نقاب اتارے یا نہ اتارے۔ گواہ اپنے موقف پر مصر تھے۔ اچانک اس کے خاوند نے غیرت میں آ کر کہا : ‘‘ مجھے قطعا یہ گوارا نہیں کہ کوئی نا محرم شخص میری بیوی کا چہرہ دیکھے۔ لہذا گواہوں کو اس کا چہرہ دیکھنے کی کوئی ضرورت نہیں۔ اس کا مہر واقعی میرے ذمہ ہے۔ ’’

    عدالت ابھی فیصلہ دینے ہی والی تھی کہ عورت بول اٹھی :

    "قاضی صاحب ! اگر میرا شوہر کسی کو میرا چہرہ دکھلانا برداشت نہیں کر سکتا تو میں بھی اس کی توہین برداشت نہیں کر سکتی، لہذا مقدمہ کو خارج کر دیں، میں نے اس کو معاف کر دیا ۔ میں غلطی پر تھی جو ایسے باغیرت ذمہ دار شخص کے خلاف مقدمہ دائر کیا"۔


    سنہری کرنیں
    عبد المالک مجاہد​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 5
    • دلچسپ دلچسپ x 1
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,161
    جو حقِ مہر نہ دے وہ با غیرت کیسے ہوا؟ غیرت مند لوگ کسی کا حق نہیں کھاتے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں