زبان نیکی اور بدی کے دروازوں میں سے ایک اہم دروازہ ہے !

محمد عامر یونس نے 'مثالی معاشرہ' میں ‏جون 5, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس محسن

    شمولیت:
    ‏مارچ 3, 2014
    پیغامات:
    901
    محترم بھائیوں اور بہنوں ! السلام علیکم ورحمۃ اللہ !

    ✿ یہ بات یاد رکھئے کہ زبان نیکی اور بدی کے دروازوں میں سے ایک اہم دروازہ ہے۔ لوگ جہنم میں اوندھے منہ اپنی زبان ہی سے کہی ہوئی باتوں کی وجہ سے ڈالے جائیں گے۔ اسی وجہ سے حدیث میں آتا ہے:

    ✦ جو اللہ اور یوم آخرت پر ایمان رکھتا ہو، اسے چاہئے کہ وہ اچھی اور بھلی بات کہے یا خاموش رہے ۔

    ✦ ایک مرتبہ صحابہ نے عرض کیا یا رسول اللہ ﷺ کون سا اسلام افضل ہے؟ تو آپ صلی اللہ ﷺ نے فرمایا کہ اس شخص کا اسلام جس کی زبان سے مسلمان ایذا نہ پائیں۔
    صحیح بخاری:جلد اول:حدیث نمبر 10

    ✿ تمام اعضاء انسانی میں زبان کو رہنما اور لیڈر کی حیثیت حاصل ہے اور ظاہر سی بات ہے جب رہنما راہ راست سے بھٹکے گا تو اس کا انجام بھی اتناہی بھیانک اور خطرناک ہوگا' اسی لئے ہم دیکھتے ہیں کہ زبان کی اکثر آفتیں گناہ ِکبیرہ میں سے ہیں مثلا غیبت' چغلی' جھوٹ' جھوٹی گواہی' بہتان تراشی' گالی گلوچ' لعن طعن' وغیرہ اور تقریبا ان سب زبانی آفتوں کا تعلق حقوق العباد سے ہے اور گناہ کبیرہ بغیر توبہ بالخصوص اگر اس کا تعلق کسی بندہ سے ہو تو اس سے معافی مانگے بغیر معاف نہیں ہوسکتا اس لحاظ سے زبان کی آفتوں سے بچنا بہت ضروری ہے۔

    ✿ آخر میں اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ ہمیں اپنی زبان کو قابو میں رکھنے اور اس سے سچی اور درست بات کہنے کی توفیق دے۔ اور ہمیں ایسی باتیں زبان پر لانے سے محفوظ رکھے جو اللہ کی ناراضگی کا باعث ہیں اور جن سے اللہ کے بندوں کی بھی دل آزاری ہو رہی ہو

    بشکریہ فیس بک دوست : عبدالقیوم
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں