روز محشر: گناہوں کا اثر

مریم جمیلہ نے 'امام ابن قيم الجوزيۃ' میں ‏جون 16, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. مریم جمیلہ

    مریم جمیلہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 26, 2015
    پیغامات:
    111
    روز محشر: گناہوں کا اثر

    گناہوں کی ایک سزا یہ بھی ہے کہ گناہوں سے قلب کی بصارت اور نور فنا ہو جاتا ہے۔ علم و ہدایت کی راہیں مسدود ہو جاتی ہیں۔ گناہ علم و ہدایت کی راہ میں حجاب بن جاتے ہیں۔ چنانچہ امام مالک نے جب امام شافعی کے اندر غیر معمولی ذہانت اور علم و فضل کی صلاحیت دیکھی تو فرمایا:

    انی اری اللہ تعالی قد القی علی قلبک نورا فلا تطفئہ بظلمۃ المعصیۃ
    میں دیکھ رہا ہوں کہ تمہارے قلب میں اللہ تعالی نے نور ڈال دیا ہے، معصیت کی ظلمت سے تم اسے بجھا نہ دینا۔

    گناہوں سے نور قلب مضمحل اور کمزور ہو جاتا ہے اور ظلمت و تاریکی قوی تر ہو جاتی ہے۔ مسلسل گناہوں کا سلسلہ جاری رہے تو دل اندھیری رات کی طرح تاریک ہو جاتا ہے اور اندھے کی طرح اندھیری رات میں بھٹکتا پھرتا ہے۔

    اللہ! کجا یہ تقوی و پرہیزگاری کی عافیت و سلامتی؟ اور کجا یہ مشقتوں کی گراں باریاں؟ اور پھر گناہوں کی سیاہی قلب سے جسم اور اعضا کی طرف آتی ہے اور جس قدر معاصی ہوتے ہیں، اسی قدر منہ اور چہرے کو سیاہ اور بے نور کر دیتے ہیں۔ پھر جب انسان مر کر عالم برزخ میں پہنچتا ہے تو اس کی قبر تاریک ہوتی ہے۔ جیسا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے:

    ان ھذہ القبور ممتلئۃ علی اھلھا ظلمۃ و ان اللہ ینورھا بصلاتی علیھم (صحیح مسلم: جنائز)
    گنہگاروں کے لیے یہ قبریں ظلمت سے پر ہو جاتی ہیں۔ میری صلاۃ و دعا سے اللہ تعالی ان کو منور کر دیتا ہے۔

    پھر جب قیامت و حشر کا دن آئے گا تو یہ ظلمت پوری قوت سے گنہگار کے منہ پر چھا جائے گی اور اس کا چہرہ کوئلے کی مانند سیاہ ہو جائے گا، جسے لوگ دیکھیں گے۔ اللہ، اللہ! ہی کیسی عقوبت اور سزا ہو گی کہ دنیا و ما فیہا کی تمام اگلی پچھلی لذتیں بھی اس کے مقابلے میں رکھی جائیں تو اس عقوبت و سزا کا مقابلہ نہیں کر سکتیں۔ پس اے تلخ عیش، تنگ دل، درماندہ انسان! تو کس دن، کب اور کس طرح انصاف کرے گا؟ حالانکہ دنیا کی اس زندگی کی حیثیت ایک خواب سے زیادہ نہیں ہے۔ واللہ المستعان

    (از دوائے شافی- امام ابن القیم الجوزیہ۔ مترجم محمد اسماعیل گودھروی۔ ناشر: ادارہ تحقیقات اسلامی، اسلام آباد)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 6
    • اعلی اعلی x 1
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,484
    جزاک اللہ خیرا وبارک فیک۔ بہت عمدہ انتخاب ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. عفراء

    عفراء webmaster

    شمولیت:
    ‏ستمبر 30, 2012
    پیغامات:
    3,920
    اللہ تعالیٰ ہمیں اپنی معصیت سے بچا کر رکھے۔ واقعی اس سے بڑی مصیبت کوئی نہیں ۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  4. اعجاز علی شاہ

    اعجاز علی شاہ -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 10, 2007
    پیغامات:
    10,324
    بارک اللہ فیک
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,122
    جزاک اللہ خیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. Bilal-Madni

    Bilal-Madni -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 14, 2010
    پیغامات:
    2,466
    گناہوں کا اثر دنیاکی زندگی میں بھی نظر اتا ہے گناہ گار کو اللہ ڈھیل دیتا ہےاور سبق بھی دیتا ہے مگر افسوس اج لوگ سبق حاصل کرنے کے بجائے دین سے اور دور بھاگتے ہیں اور دنیا کی نہ ختم ہونے والی چاہت میں مبتلا ہے ایک مسلمان کیلئے دین سے دوری سے بڑا شاید کوئی گناہ ہو میری نظر ہے کیونکہ اللہ جس سے محبت کرتا ہے اس کو دین کی محبت میں مبتلا کر دیتا ہے اور دین کی محبت ہی گناہوں سے بچنے کا سب سے بڑا ذریعہ ہے الله ہم سب کو دین کی محبت میں مبتلا رکھے اور گناہوں پر توبہ کرنے کی توفیق دے آمین
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں