پیغام رسانی کے مفت ذرائع، مفید کیا مضر کیا

عائشہ نے 'موبائل کی دُنیا' میں ‏جنوری 20, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,094
    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    ٹیکنالوجی کی ترقی سے پیغام رسانی کے نئے نئے مفت ذرائع سامنے آ رہے ہیں، سوشل میڈیا سروسز سے لے کر میسنجرز تک انسان بہت تیزی سے اپنا پیغام پہنچا سکتے ہیں لیکن نت نئے مفت ذرائع نے ایک دردِ سری بھی پیدا کر دی ہے کہ آخر کون کون سے میسنجرز اور ایپس اپنے آلات ( ڈیوائسز) میں رکھے جائیں؟
    فرینڈز کا ایک گروہ آپ کو فیس بک کی طرف کھینچتا ہے تو دوسرا وی چیٹ wechat پر، کچھ کولیگز واٹس ایپ whatsapp پر ہیں تو کچھ ویبر viber پر، کوئی دی ٹیلیگرام the telegram انسٹال کرنے کا مشورہ دیتا ہے تو کوئی اور سکائپ skype کا قائل ہے۔ میری کوشش ہوتی ہے کہ اپنی ڈیوائسز ( فون، لیپ ٹاپ) وغیرہ کو غیر ضروری ایپس اور سافٹوئرز سے صاف رکھوں، کام کے متعلق ضروری سافٹوئرز کی اپ ڈیٹس ہی اتنی ہو جاتی ہیں کہ باقی اطلاعات کو دیکھنے کا وقت نہیں ملتا لیکن ان میسنجرز نے حیران و پریشان کر کے رکھ دیا ہے۔
    اس موضوع کا مقصد یہ ہے کہ اچھے میسنجرز کے متعلق تکنیکی معلومات جمع کی جائیں، کون سے ذرائع ہمارے آلات کے لیے مضر ہو سکتے ہیں، خدمات (سروسز)کیسی ہیں وغیرہ وغیرہ۔ اگر آپ اپنے تجربات اور مفید مشورے شامل کریں تو مجھے خوشی ہو گی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  2. انا

    انا ناظمہ خاص انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 4, 2014
    پیغامات:
    1,400
    و علیکم السلام و رحمتہ اللہ و برکاتہ

    ایک حد دو سے زیادہ میسنجر فون میں رکھنا ، مجھے بھی درد سر اور میموری اور بیٹری کا ضیاع ہی لگتا ہے ۔ دوست احباب کی طرف سے اکثر فرمائش آ جاتی ہیں کہ فلاں میسنجر ڈاؤن لوڈ کر لیں ۔ یہ فلاں میسنجر سے زیادہ اچھا ہے ۔ لیکن ایسی فرمائشوں کو نظر انداز کر دینا چاہیئے جب تک کہ اپ کی اپنی ضرورت نہ ہو۔ میں نے اپنے موبائل میں وٹس ایپ اور سکائپ رکھے ہوئے ہیں ۔ وٹس ایپ اس لیے کہ مفت میسجز ہو جاتے ہیں اور اب تو کال بھی ہو جاتی ہے ۔ سکائپ سسرال میں استعمال ہوتا ہے۔ لیکن میں سکائپ کے خلاف ہوں ۔ سلو سروس ہے ۔ بیٹری بہت کھاتا ہے۔ مجھے ذاتی طور پر وٹس ایپ ہی پسند ہے ۔ اور اسی کو زیادہ استعمال کرتی ہوں ۔ فوری میسجز اور کال ۔
    میرے کچھ دوستیں دبئی وغیرہ میں ہیں ،ان کے پاس سکائپ پر سگنلز صحیح نہیں آتے تو اس لیے اکثر اصرار ہوتا ہے کہ کوئی اور ایپ استعمال کر لیں ۔
    اس کے علاوہ یاد آیا فیس بک کا میسنجر بھی ہے ۔میں اسے استعمال نہین کرتی لیکن بہرحال چونکہ فیس بک کا اکاونٹ بنا ہوا ہے تو اگر کوئی میسج کرے تو جواب دینے کے لیے رکھا ہوا ہے۔ اگر آپ کے میسج بروقت پہنچ جاتے ہیں اور کال میں کو مسئلہ نہیں ، سروسز بھی مفت ہیں تو بھی میرا نہیں خیال کسی اور میسنجر کو ڈاون لوڈ کرنے کی ضرورت ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  3. arifkarim

    arifkarim محسن

    شمولیت:
    ‏جولائی 17, 2007
    پیغامات:
    256
    Last edited by a moderator: ‏جنوری 22, 2016
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,094
    شکریہ انا یعنی آپ بھی میری طرح ہیں۔موبائل میسجز کو اکثر مقررہ وقت پر ہی دیکھتی ہوں، ای میل کے ساتھ بھی میسنجرز ہوتے ہیں، میرے پاس اکثر آف رہتے ہیں ورنہ یکسوئی سے کام ممکن نہیں ہوتا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  5. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,094
    ایک سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ ہے twoo، اس کی سپیمنگ بہت عاجز کر دیتی ہے۔ میری کچھ فرینڈز اس پر ہیں، وہاں سے فضول نوٹیفکیشنز آپ کا ای میل ان باکس بھرتے رہیں گے، بھلے آپ وہاں رجسٹر صارف ہوں یا نہ ہوں۔
     
    • معلوماتی معلوماتی x 2
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. عفراء

    عفراء webmaster

    شمولیت:
    ‏ستمبر 30, 2012
    پیغامات:
    3,919
    وعلیکم السلام
    میں نے کبھی ان ایپس پر تحقیق نہیں کی۔ لہذا تکنیکی معلومات لکھنا مشکل ہے۔

    فیس بک میسنجر خاصا بدنام ہے جاسوسی کے حوالے سے۔ اس لیے وہ کبھی انسٹال نہیں کیا۔لیکن ضروری نہیں باقی ایپس محفوظ ہوں۔

    میرے خیال میں انٹرنیشنل روابط کے لیے بذریعہ فون ایک واٹس ایپ کافی ہوتا ہے ۔اور بذریعہ ای میل ہو تو جی میل کا ہینگ آؤٹ۔
    اس کی وجہ یہ ہے کہ یہ دونوں بے حد مقبول ہیں۔ شاید ہی کوئی ہو جو ان سے واقف نہ ہو۔ دونوں میں کال اور میسج کی سہولیات ہیں۔ اینڈرائڈ پر میسر بھی ہیں۔ ونڈوز فون کے ساتھ البتہ گوگل کی جنگ ہے لہذا ہینگ آؤٹ نہیں وہاں ملتا۔

    وائبر کا استعمال کم ہوگیا ہے۔ اور سکائپ استعمال ہوتا ہے لیکن وہی انا والی بات کہ سلو ہے۔ ٹیلیگرام کا بھی سنا ہے اچھا ہے مگر میرا تجربہ نہیں۔ ایک اور محفوظ میسنجر، بلیک بیری BBM میسنجر بھی ہے۔
    باقی رنگ برنگی ایپس نہ ہی استعمال کی جائیں تو بہتر ہے۔
     
    Last edited: ‏جنوری 21, 2016
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  7. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,160
    واٹس ایپ اور فیس بک میسنجر اچھے اور معیاری ہیں۔ اس لئے ایک عرصہ سے یہی استعمال میں ہیں۔ باقی ایپس چیک نہیں کی ساری بات ضرورت کی ہے ،،آپ کچھ بھی انسٹال کرسکتے ہیں ـ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    • مفید مفید x 1
  8. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,094
    متفق۔ شاید اس لیے کہ مجھے کالز کی اتنی ضرورت نہیں پڑتی۔
    اچھا ہے، میں نے فون میں نہیں کیا، لیپ ٹاپ میں انسٹال کیا ہے۔مقررہ وقت پر ہی کھولتی ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  9. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,094
    آپ نے تو پھر بھی دو ایک کو مینیج کر لیا، میری ایک بچپن کی فرینڈ ہیں انہوں نے کوئی آٹھ دس ایپس رکھے ہیں۔ان سے کنیکٹ ہوتے ہی مجھے سب ایپس سے انوائٹ آ رہی تھیں۔ میں نے یوں ہی پوچھا کتنے ایپس ہیں آپ کے پاس۔ بتانے لگیں فلاں ایپ ساس کی وجہ سے، یہ بڑی نند کی وجہ سے، یہ میاں کے لیے، یہ بھائی بھابی سے بات کے لیے، شادی شدہ بہن سے بات کرنے کے لیے الگ ایپ اوراپنی امی سے بات کرنے کے لیے الگ، اور ان کی دریا دلی دیکھیے مجھ سے بات کرنے کے لیے میری کمپنی کا نمبر لے رکھا ہے۔ بتا رہی تھیں کہ مجھ سے بات کرنے کے لیے انہوں نے میری کلاسز کی ٹائمنگ نوٹ کر رکھی ہیں کہ میں کس دن ،کب فارغ ہوتی ہوں۔ مجھے ان پہ بہت حیرت بھی ہوتی ہے اور رشک بھی آتا ہے کہ وہ دوسروں کا کتنا خیال رکھتی ہیں۔ وہ بچپن سے ایسی ہی ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 4
  10. عفراء

    عفراء webmaster

    شمولیت:
    ‏ستمبر 30, 2012
    پیغامات:
    3,919
    افف اتنی انٹینسو سوشل نیٹ ورکنگ!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں