بچوں کی ذہانت بڑھانے کے لیے 8 مفید مشورے

ابو عبداللہ صغیر نے 'مثالی معاشرہ' میں ‏اپریل 2, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابو عبداللہ صغیر

    ابو عبداللہ صغیر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏مئی 25, 2008
    پیغامات:
    1,980
    بچوں کی ذہانت بڑھانے کے لیے 8 مفید مشورے!
    ’خود اعتمادی بچے کی ذہنی نشو نما کی شاہ کلید‘
    والدین اپنے بچوں کو زیادہ سے زیادہ ذہین دیکھنے کے خواہاں ہوتے ہیں تاکہ بچے حصول علم کے میدان میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرسکیں۔ اس مقصد کے لیے والدین خصوصا ماؤں کی جانب سے مختلف طریقے بھی اختیار کیے جاتے ہیں۔ دیکھنے میں یہ بھی آیا ہے کہ بہت سے بچے کم سنی میں تنہائی، لا پرواہی جیسی عادات کے ساتھ بول چال میں نہایت کمزور واقع ہوتے ہیں مگران کے بعض جسمانی اور نفسیاتی عوارض کو دور کردیا جائے تو وہ بچے کامیاب سائنسدان،علماء، موسیقار ، موجد اور فن کار بن کر ابھرسکتے ہیں۔
    مصرکے ایک ممتاز ماہر نفسیات ڈاکٹر مجد العجرودی نے اخبار ’الیوم السابع‘ سے بات کرتے ہوئے ایسے آٹھ مفید مشورے بیان کیے ہیں جو تمام والدین بالخصوص ماؤں کے لیے ان کے بچوں کی ذہنی نشونما کے حوالے سے نہایت اہمیت کے حامل ہیں۔ وہ مفید مشورے کیا ہیں؟ آپ بھی جانیے۔
    1۔ بچے میں خود اعتمادی پیدا کرنا۔ چونکہ بچہ اپنے ماں باپ کی آنکھوں میں خود کو دیکھتا ہے۔ اگر بچے کی زیادہ سے زیادہ تعریف وتوصیف کی جائے گی تو اس میں خود اعتمادی میں اضافہ ہوگا اور یوں اس کی ذہنی صلاحیتوں کی بہتر انداز میں نشو ونما ہوسکے گی۔
    2۔ بچوں میں خود اعتمادی پیدا کرنے کی کوشش صرف والدین تک محدود نہیں رہنی چاہیے۔ بچے کو ’محدود ذہنیت‘‘ کا الزام نہیں دینا چاہیے بلکہ ماؤں کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنے بچوں میں خود اعتمادی پیدا کرنے کے لیے اس کے اساتذہ اور دوستوں کو بھی اس بات پرقائل کریں کہ وہ بچے میں خود اعتمادی کےفروغ کی کوشش کریں۔
    3۔ بچے کو ڈرانے دھمکانے اور اسے دوسرے بچوں کی نظر میں گرانے سے گریزکریں، چاہے وہ بار بار غلطی کیوں نہ کرے۔ بار بار کی ڈانٹ ڈپٹ سے بچہ اندر سے ٹوٹ جاتا ہے۔
    4۔ بچے کی ان خوبیوں کو تلاش کریں جو اسے دوسروں سے ممتاز کرتی ہیں۔ اس کی آواز اور قدرت کلام کو بہتر بنانے پر توجہ دییجیے۔ اسے گھر میں ایسا ماحول فراہم کیجیے تاکہ وہ اسکول میں بھی اپنے اوپر اعتماد پید اکرسکے۔
    5۔ بچے کی ذہانت سے زیادہ اس پر کام کا بوجھ نہ ڈالیے۔ ایسا نہ ہو کہ کام کے بوجھ تلے دب کر بچہ ناکام ہواور مایوس ہوجائے۔
    6۔ بچے کی محدود صلاحیتوں کو بہتر بنانے میں ہمہ وقت اس کی مدد جاری رکھیں۔ پینٹنگز پر توجہ دینےکے بجائے بچے کے تدریسی مواد مثلا اس کی لکھائی پڑھائی میں اس کی مدد کیجیے۔
    7۔ دوسرے بچوں کے سامنے اپنے بچے کو نفسیاتی طورپر گرانے کی کوشش نہ کیجیے بلکہ دوسروں کے سامنے بھی اپنے بچے کی تعریف کیجیے۔
    8۔ بچے کے پسندیدہ [مثبت] مشاغل میں اس کی مدد کی کیجے تاکہ اس میں دوسرے بچوں کے درمیان رہتےہوئے خود اعتمادی کا احساس پھلتا پھولتا رہے۔


    ماخذ
     
    Last edited by a moderator: ‏اپریل 2, 2016
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. طارق راحیل

    طارق راحیل -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 23, 2009
    پیغامات:
    351
    شکریہ۔۔۔
     
  3. حافظ عبد الکریم

    حافظ عبد الکریم محسن

    شمولیت:
    ‏ستمبر 12, 2016
    پیغامات:
    551
    جزاک اللہ خیرا
    بہت عمدہ تحریر ہے ایک بات بتا دینا مناسب سمجھتا ہوں کہ بچے اپنی ذہانت بنانا چاہتے ہیں مگر بسا اوقات انہیں ماحول ساتھ نہیں دیتا خصوصا اسکول و مدارس کے طلبہ جب دلجوئی سے محنت کرتے ہیں ایک کامیاب اور ذہین طالب علم بن کر دین و ملت کی خدمت کرنا چاہتے ہیں ایسے میں چند لوگ(طلبہ) اس کا مذاق اڑاتے ہیں یا پھر کسی طرح اس کا ایسا مذاق کرتے ہیں جس کی وجہ سے اسکی ہمت پست ہوجاتی ہے اور وہ طالب علم کامیاب بہت مشکل سے ہو پاتا ہے الا یہ کہ وہ دوسروں پر توجہ نہ دے
    ضرورت اس امر کی ہے اسکول و مدارس میں بھی والدین اپنی اولاد پر نظر رکھیں اس کی ہر پریشانی سے واقف ہوتے رہیں اور اس کی ہر طرح کی مدد کرنے کی مکمل کوشش کریں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. ہدایت اللہ

    ہدایت اللہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جنوری 5, 2017
    پیغامات:
    43
    ماشاءاللہ بہت خوب مشورہ ہے
    جزاک اللہ خیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. ہدایت اللہ

    ہدایت اللہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جنوری 5, 2017
    پیغامات:
    43
    جی آپ نے بالکل درست کہا کیوںکہ اچھے اچھے ذہین بچے بھی اس پست ہمتی کی وجہ سے اپنی زندگی برباد کربیٹھے ہیں
    اسی لئے جہاں والدین بچوں کو ذہین بنانےکی کوشش کرتے ہیں وہیں دوسرےبچوں کے ساتھ اسکا برتاؤ کیسا ہے اس پر بھی توجہ دیں تو بہتر ہو گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں