کتب بینی کا ذوق کیسے پیدا ہو ؟

ابوعکاشہ نے 'مطالعہ' میں ‏مئی 18, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    13,855
    جی یہ تو کتابوں سے تعلق قائم رکھنا ہے ۔ کتاب ختم کرنے کے لئے کوئی بھی طریقہ اختیار کیا جاسکتا ہے ۔عناوین یا ابواب میں بھی تقسیم کیا جاسکتا ہے ۔
     
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,303
    مائیکروسافٹ ایج میں سیٹنگز میں جا کر کتاب پڑھنے کے لیے اچھی تبدیلیاں کی جا سکتی ہیں۔ جس کے بعد یہ آپ کی پسندیدہ کتاب کو فیورٹس میں شامل کر لیتا ہے اور جس صفحے پر مطالعہ رکا تھا اس کو بک مارک بھی کر لیتا ہے۔ اگلی مرتبہ ایک کلک سے آپ وہیں سے مطالعہ شروع کر سکتے ہیں۔
    اگر آپ ایج کو براؤزر کے طور پر استعمال کر رہے ہوں تو نیٹ سے پہلے آپ کی گزشتہ مطالعہ کردہ کتاب کھلتی ہے۔ جس سے کتاب بینی کی مفید عادت پڑنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    13,855
    Stages of Reader

    FB_IMG_1504543223001-1.jpg
     
    • مفید مفید x 1
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,303
    جن کو انٹرنیٹ مطالعے میں رکاوٹ لگتا ہے ان کے لیے یو ٹیوب بکس موجود ہے۔ فری وڈیو بکس ڈاؤن لوڈ کریں اور گھر سے منزل تک پہنچنے تک سنتے سنتے کتاب ختم کر لیں ۔
    اسلام ہاؤس ڈاٹ کام پر انگریزی، عربی اردو سمیت کئی زبانوں میں آڈیو بکس موجود ہیں۔اس سمسٹر اردو کی دس سے زائد کتابیں مفت طالبات کے لیے حاصل کیں اور بغیر پرنٹ کیے پڑھیں کیوں کہ میری کلاس میں فون پر کوئی پابندی نہیں۔
     
  5. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,303
    جنہوں نے مطالعہ کرنا ہے وہ انٹرنیٹ پر بھی پڑھتے ہیں۔ ایک آسان طریقہ یہ ہے کہ کلاؤڈ فولڈر میں اپنے کام کی کتابیں ڈال کر رکھ لیں۔ جہاں وقت ملے کھول کر مطالعہ جاری رکھیں۔
    روایتی لائبریری سے اب میرا دم گھٹتا ہے کیوں کہ اپنی لائبریری پاس ہوتی ہے۔ لائبریرین کی تنک مزاجی برداشت کرنے کی ضرورت نہیں رہی۔
     
  6. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,303
    [QUOTE="بابر تنویر, post: 491625, member: 8"
    شوق کیسے پیدا کیا جاۓ؟ مطالعہ کرنے کے لیے دن یا رات کا کوئ وقت مقرر کر لیجیے۔ میرے خیال میں سب سے بہتر وقت سونے سے پہلے کا ہے۔ سونے سے آدھا گھنٹہ پہلے اپنے تمام مصروفیات سے فارغ جائیں۔ اور پھر نیند آنے تک کتاب کا مطالعہ کر لیجیے۔ اور یہ مستقل مزاجی سے کیجیے۔ شروع مین شائد کچھ مشکل ہو لیکن جب عادت ہوگئ تو آپ کو مطالعہ کے بغیر نیند ہی نہیں آۓ گی۔[/QUOTE]
    رات کو کتاب سن کر سونا ہو تو آج کل کافی ایپس اور ویب سائٹس مفت آڈیو بکس دے رہی ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  7. ابو حسن

    ابو حسن نوآموز

    شمولیت:
    ‏اتوار
    پیغامات:
    24
    کتاب چاہے اوراق کی صورت میں ہو یا وہ کمپیوٹر،فون میں ہو اصل مقصد اس سے مستفید ہونا ہے اور علم نافعہ حاصل کرنا،
    الحمدللہ کتب بینی کا ایسا ذوق ہے کہ بیان نہیں کرسکتا (اللہ تعالی ریا کاری سے محفوظ فرمائے) صرف یہی نہیں والد صاحب کی طرف سےکتاب کا ادب ملحوظ رکھنا ورثہ میں ملا ،صفحہ موڑنا مراجع کیلئے، کتاب میں کہیں قلم سے نشان لگانا یا جیسے مرضی کتاب کو پھینک دینا اس پر سخت تنبیہ کی جاتی اور ان سب احتیاطوں سے حاصل یہ ہوا کہ کتاب صاف ستھری و بہترین حالت میں رہتی بلکہ سعودیہ میں گزرے ایام میں ایک صاحب ساتھ والے کمرے میں رہتے تھے اور انکا کاروبار پاکستانی اخبار ،رسائل بیچنا تھا تو انسے رسائل لے کر مطالعہ کرتا ایک دن پوچھنے لگے کہ واقعی میں آپ یہ پڑھتے بھی ہو یا صرف دو تین دن اپنے پاس رکھنے کے بعد مجھے ویسے ہی لوٹا دیتے ہو ؟ وجہ ایک تو پڑھنے کی رفتار اور دوسرا صفحات کو پلٹتے ہوئے احتیاط کو بروے کار لانا ہوتا۔

    اپنا تجربہ بیان کررہا ہوں پہلی مرتبہ کتاب صرف پڑھتا ہوں ،دوسری مرتبہ سمجھنے کیلئے اور تیسری مرتبہ یاد رکھنے کیلئے ،اور جتنے زیادہ صفحات پر کتاب مشتمل ہوتی ہے اتنا زیادہ سرور ملتا ہے مطالعہ کرتے ہوئے ،ابھی بھی ایسا ہوتا ہے کہ اگر کوئی ونڈو کھلی ہوئی ہے اور کچھ بھی کام وغیرہ کررہا ہوں لیکن ساتھ میں "پی ڈی ایف " میں کوئی نہ کوئی کتاب زیر مطالعہ رہتی ہے اور یہی کتاب فون میں بھی ہوتی ہے جب کام پر ہوں تو وہاں فارغ وقت میں وہیں سے مطالعہ جاری رہتا ہے ،آپ کے پاس فون میں سہولت موجود ہے تو تجربہ کرکے دیکھ لیں ،امید ہے ان شاءاللہ اس سے فائدہ ہوگا،
     
    Last edited: ‏بوقت جنوری 22, 2018 9:23 دن
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں