حضرت مسلم بن عقیلؓ کی ایک روایت

زبیراحمد نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏جون 18, 2017 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. زبیراحمد

    زبیراحمد -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 29, 2009
    پیغامات:
    3,446
    درج ذیل روایت کیا درست ہے خاص کرکے جس کو انڈر لائن کرکے متن کا رنگ لال کیا گیا ہے اسکی ذراوضاحت کریں کہ کیا روایت میں یہ الفاظ ثابت ہیں؟
    حضرت مسلم بن عقیلؓ کے ہاتھ پر اسی ہزار80,000/- کوفی بیعت کرچکے تھے ۔ جب عبیداﷲ ابن زیاد آیا توان سب لوگوں نے اسے مرحبا کہا خوش آمدید کہا ۔حضرت مسلم بن عقیلؓ کو بے یار ومددگار چھوڑدیا ہانی ابن عروہ کے گھر میں تشریف لے گئے ۔حضرت ہانی بھی شہید ہوگئے ،حضرت مسلم بن عقیلؓ کو بھی پکڑ لیا گیا مغرب کے وقت حضرت مسلم بن عقیلؓ نے نماز کی امامت کرائی ہزاروں آدمی پیچھے تھے اور جس وقت نماز کا سلام پھیرا اس وقت کیفیت یہ تھی کہ تین آدمی پیچھے موجود تھے باقی سارے کے سارے چلے گئے تھے اور یہ سب سے بڑی عجیب بات ہے کہ مغرب کی نماز کے بعد کوئی آدمی نہیں تھا ۔بالآخر مسلم بن عقیلؓ گرفتار ہوئے عبیداﷲ بن زیاد کے دربار میں لایا گیا جب سامنے آئے تو سلام نہیں کیا اس نے کہا میں سلام کا مستحق نہیں انہوں نے کہا جو نبی صلی اﷲ علیہ و سلم کے خاندان کا دشمن ہے وہ سلام کا مستحق نہیں اس نے کہا تم میرا ادب نہیں بجالائے فرمایا تو اس قابل ہی نہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,943
    یہ روایت کسی طور بھی ثابت نہیں ہوسکتی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں