اللہ سبحانه و تعالى جس کے ساتھ بھلائی کا ارادہ کرتے ہیں

عبد الرحمن یحیی نے 'حدیث - شریعت کا دوسرا اہم ستون' میں ‏فروری 12, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عبد الرحمن یحیی

    عبد الرحمن یحیی -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 25, 2011
    پیغامات:
    2,312
    اللہ سبحانه و تعالى جس کے ساتھ بھلائی کا ارادہ کرتے ہیں
    1 ۔ اسے دین کی سمجھ عطا کرتے ہیں

    صحيح البخاري: كِتَابُ العِلْمِ (بَابُ مَنْ يُرِدِ اللَّهُ بِهِ خَيْرًا يُفَقِّهْهُ فِي الدِّينِ)
    حکم : أحاديث صحيح البخاريّ كلّها صحيحة

    صحیح بخاری: کتاب: علم کے بیان میں (باب:فقاہت دین کی فضیلت)
    مترجم: شیخ الحدیث حافظ عبد الستار حماد (دار السلام)

    71 . حَدَّثَنَا سَعِيدُ بْنُ عُفَيْرٍ، قَالَ: حَدَّثَنَا ابْنُ وَهْبٍ، عَنْ يُونُسَ، عَنِ ابْنِ شِهَابٍ، قَالَ: قَالَ حُمَيْدُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، سَمِعْتُ مُعَاوِيَةَ، خَطِيبًا يَقُولُ سَمِعْتُ النَّبِيَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَقُولُ: «مَنْ يُرِدِ اللَّهُ بِهِ خَيْرًا يُفَقِّهْهُ فِي الدِّينِ، وَإِنَّمَا أَنَا قَاسِمٌ وَاللَّهُ يُعْطِي، وَلَنْ تَزَالَ هَذِهِ الأُمَّةُ قَائِمَةً عَلَى أَمْرِ اللَّهِ، لاَ يَضُرُّهُمْ مَنْ خَالَفَهُمْ، حَتَّى يَأْتِيَ أَمْرُ اللَّهِ»
    71 . سيدنا معاویہ رضی اللہ تعالی عنه سے روایت ہے ، انہوں نے دوران خطبہ میں کہا : میں نے نبی ﷺ کو یہ فرماتے ہوئے سنا : " اللہ تعالیٰ جس کے ساتھ بھلائی چاہتا ہے اسے دین کی سمجھ عنایت کر دیتا ہے ۔ اور میں تو صرف تقسیم کرنے والا ہوں اور دینے والا تو اللہ ہی ہے ۔ اور ( اسلام کی ) یہ جماعت ہمیشہ اللہ کے حکم پر قائم رہے گی ، جو ان کا مخالف ہو گا انہیں نقصان نہیں پہنچا سکے گا یہاں تک کہ اللہ کا حکم ، یعنی قیامت آ جائے ۔ "

    2 ۔ اسے مصائب و آلام میں مبتلا کرتے ہیں

    صحيح البخاري: كِتَابُ المَرْضَى
    (بَابُ مَا جَاءَ فِي كَفَّارَةِ المَرَضِ وَقَوْلِ اللَّهِ تَعَالَى: {مَنْ يَعْمَلْ سُوءًا يُجْزَ بِهِ} [النساء: 123])
    حکم : أحاديث صحيح البخاريّ كلّها صحيحة

    صحیح بخاری: کتاب: امراض اور ان کے علاج کے بیان میں
    (باب: بیماری کے کفارہ ہونے کا بیان اور اللہ تعالیٰ نے سورۃ نساءمیں فرمایا جو کوئی برا کرے گا اس کو بدلہ ملے گا)

    5645 . حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يُوسُفَ، أَخْبَرَنَا مَالِكٌ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ أَبِي صَعْصَعَةَ، أَنَّهُ قَالَ: سَمِعْتُ سَعِيدَ بْنَ يَسَارٍ أَبَا الحُبَابِ، يَقُولُ: سَمِعْتُ أَبَا هُرَيْرَةَ، يَقُولُ: قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: «مَنْ يُرِدِ اللَّهُ بِهِ خَيْرًا يُصِبْ مِنْهُ»

    5645 . سيدنا ابو ہریرہ رضی اللہ تعالی عنه سے روایت ہے انہوں نے کہا کہ
    رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : ” اللہ تعالیٰ جس کے ساتھ خیر و برکت کا ارادہ کرتا ہے اسے مصائب و آلام میں مبتلا کردیتا ہے ۔ “
    اردو حاشیہ :
    ان جملہ احادیث کے لانے کا مقصد یہی ہے کہ مسلمان پر طرح طرح کی تکالیف اور تفکرات آتی ہی رہتی ہیں لیکن وہ صبر کر کے جھیلتا ہے نا شکری کا کوئی کلمہ زبان سے نہیں نکالتا گو کتنی ہی تکلیف ہو مگر صبر و شکر کو نہیں چھوڑتا ، ان سب سے اس کے گناہ معاف ہوتے رہتے ہیں اور درجات بڑھتے رہتے ہیں گویا یہ سب آیت من یعمل سوء یجزبه ( النساء: 110 ) ۔

    3 ۔ اسے نیک اعمال کی توفیق دیتے ہیں

    جامع الترمذي: أَبْوَابُ الْقَدَرِ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ ﷺ
    (بَابُ مَا جَاءَ أَنَّ اللهَ كَتَبَ كِتَابًا لأَهْلِ الْجَنَّةِ وَأَهْلِ النَّارِ)
    حکم : صحیح

    جامع ترمذی: كتاب: تقدیرکے احکام ومسائل
    (باب: اللہ تعالیٰ نے جنتیوں اور جہنمیوں کو اپنی کتاب میں لکھ رکھاہے)

    2144 . حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ حُجْرٍ حَدَّثَنَا إِسْمَعِيلُ بْنُ جَعْفَرٍ عَنْ حُمَيْدٍ عَنْ أَنَسٍ قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا أَرَادَ اللَّهُ بِعَبْدٍ خَيْرًا اسْتَعْمَلَهُ فَقِيلَ كَيْفَ يَسْتَعْمِلُهُ يَا رَسُولَ اللَّهِ قَالَ يُوَفِّقُهُ لِعَمَلٍ صَالِحٍ قَبْلَ الْمَوْتِ قَالَ أَبُو عِيسَى هَذَا حَدِيثٌ حَسَنٌ صَحِيحٌ

    2144 . سيدنا انس رضی اللہ تعالی عنه کہتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا : '' جب اللہ تعالیٰ کسی بندے کے ساتھ بھلائی کا ارادہ کرتاہے تو اس سے عمل کراتا ہے ، عرض کیا گیا : اللہ کے رسول ! کیسے عمل کراتاہے؟
    آپ صلى الله عليه وسلم نے فرمایا : '' موت سے پہلے اسے عمل صالح کی توفیق دیتا ہے . ''
    امام ترمذی کہتے ہیں: یہ حدیث حسن صحیح ہے۔

    4 ۔ اسے توشہ دیتے ہیں اور پھر اس کی روح قبض کرتے ہیں

    قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ إِذَا أَرَادَ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ بِعَبْدٍ خَيْرًا عَسَلَهُ قِيلَ وَمَا عَسَلُهُ قَالَ يَفْتَحُ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ لَهُ عَمَلًا صَالِحًا قَبْلَ مَوْتِهِ ثُمَّ يَقْبِضُهُ عَلَيْهِ " رواه أحمد 17330 وصححه الألباني في السلسلة الصحيحة 1114.

    رسول كريم صلى اللہ عليہ وسلم نے فرمايا :
    " جب اللہ تعالى كسى بندے كے ساتھ خير اور بھلائى كا ارادہ كرتا ہے تو اسے توشہ ديتا ہے "
    كہا گيا كہ : اسے كيا توشہ ديتا ہے ؟
    تو رسول كريم صلى اللہ عليہ وسلم نے فرمايا :
    " اس كى موت سے قبل اللہ تعالى اس كے ليے اعمال صالحہ آسان كر ديتا ہے ، اور پھر ان اعمال صالحہ پر ہى اس كى روح قبض كرتا ہے "۔

    مسند احمد حديث نمبر ( 17330 )
    علامہ البانى رحمه اللہ تعالى نے السلسلة الصحيحة حديث نمبر ( 1114 ) ميں اسے صحيح قرار ديا ہے .
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 4
  2. رفی

    رفی منتظمِ اعلٰی

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,211
    جزاک اللہ خیرا شیخ!

    اللھم اجعلنا منھم

    آمین یا رب العالمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. بابر تنویر

    بابر تنویر منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,111
    جزاک اللہ خیرا شیخ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. سیما آفتاب

    سیما آفتاب ناظمہ

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اپریل 3, 2017
    پیغامات:
    398
    جزاک اللہ خیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  5. حافظ عبد الکریم

    حافظ عبد الکریم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏ستمبر 12, 2016
    پیغامات:
    521
    جزاک اللہ خیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. رفی

    رفی منتظمِ اعلٰی

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,211
Loading...
Similar Threads
  1. ابوعکاشہ
    جوابات:
    0
    مشاہدات:
    5
  2. شفقت الرحمن
    جوابات:
    1
    مشاہدات:
    223
  3. ضیاء الحق نعیم
    جوابات:
    1
    مشاہدات:
    46
  4. شفقت الرحمن
    جوابات:
    0
    مشاہدات:
    179
  5. JUNAID BIN SHAHID
    جوابات:
    0
    مشاہدات:
    23

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں