لڑکیوں کے فطری رجحانات

سیما آفتاب نے 'گوشۂ نسواں' میں ‏مارچ 15, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. سیما آفتاب

    سیما آفتاب ناظمہ

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اپریل 3, 2017
    پیغامات:
    398
    چھوٹی بچیوں کو جب بھی دیکھا چاہے وہ بھانجیاں ہوں، بیٹی ہو یا دیگر رشتہ دار، محلہ دار اور دوست احباب کی بیٹیاں۔۔۔۔۔
    کھلونوں کی دکان پر کھڑی ہونگی تو کس پر ہاتھ رکھتی ہیں زیادہ تر؟؟؟
    کچن سیٹ۔۔۔۔
    یا پھر میک اپ کی چیزیں۔۔۔۔۔
    یا پھر ہمیشہ سے پسندیدہ گڑیا۔۔۔۔۔۔
    یہ نفسیات صرف مشرق میں نہیں بلکہ مغرب میں بھی موجود ہے۔۔۔۔۔
    چیزوں کو سلیقے سے رکھتی ہیں، سنبھال سنبھال کر رکھتی ہیں، محبت سے رکھتی ہیں۔۔۔۔۔۔
    گڑیا کو گود میں اُٹھائے پھرتی ہیں، اس کے ناز اُٹھاتی ہیں، اس کے بال بناتی ہیں۔۔۔۔۔
    کچن سیٹ آئے تو باپ کو خاص طور پر چائے بنا کردیتی ہیں جھوٹ موٹ کی اور باپ بھی مزے مزے لے کر پی لیتا ہے [​IMG]:)
    جبکہ لڑکے یہ چیزیں نہیں اٹھاتے بلکہ اکثر خراب کردیتے ہیں اور بچیاں روتی چلاتی،منہ بسورتی بڑوں کو شکایت لگاتی ہیں۔۔۔۔۔
    لڑکیوں کے اندر یہ رجحان کہاں سے آیا؟؟؟
    ماحول کی وجہ سے؟؟؟
    ایک حد تک ماحول کا اثر ضرور ہوتا ہے لیکن مشرق مغرب میں ماحول بہت فرق لیے ہے لیکن بچیوں کا رجحان کم وبیش ایک جیسا ہے۔۔۔۔۔۔۔
    پھر کہاں سے یہ رجحان آیا؟؟؟
    دوسرا جواب یہ ہے کہ فطرت کی وجہ سے، جبلت کی وجہ سے۔۔۔۔۔
    لڑکیوں کی فطرت میں یہ چیز موجود ہے چاہے قبلِ مسیح کا زمانہ ہو یا آج کا مشرق مغرب ہو۔۔۔۔۔۔۔۔
    وجہ کیا ہے؟؟؟
    ان رجحانات کے تین زاویے نظر آتے ہیں۔۔۔۔۔
    ایک گھرداری کے معاملات کی طرف رجحان جیسا کہ کچن سیٹ سے نظر آیا۔۔۔۔۔۔
    دوسرا بچوں کو سنبھالنے کی طرف قدرتی رجحان واضح ہوا جیسا کہ گڑیا اور اس کے متعلقہ سیٹ سے دیکھتے ہیں۔۔۔۔۔۔
    تیسرا اپنے آپ کو خوبصورت دیکھنا جیسا کہ میک اپ کِٹ سے نظر آیا اور بھی بہت سی چیزیں ہیں۔۔۔۔۔۔۔
    یہ نہ تو کسی ماحول سے رجحانات پیدا ہوئے، نہ کسی کے سکھانے پر ہوئے بلکہ گھر میں موجود سب سے پہلا بچہ اگر بیٹی ہو تب بھی یہی معاملہ نظر آئے گا۔۔۔۔۔۔۔
    ہاں! اِس کے الٹ تب نظر آئے گا جب ماں باپ یا بڑے زبردستی حوصلہ شکنی کریں یعنی ماحول فراہم کرنے کی کوشش کریں۔۔۔۔۔۔
    یہ بچی کی فطرت ہے جس سے ہم سب واقف ہیں اور اِن میں عکس نظر آتے ہیں کہ اُس کی شخصیت کن رجحانات کے اردگرد گھومتی ہے۔۔۔۔۔۔۔
    گھر، بچے اور خود خوبصورت نظر آنا۔۔۔۔۔۔۔

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    یاد رکھنے کی بات ہے کہ انسان کی بقا بھی اپنی فطرت کے مطابق چلنے میں ہے، اپنی نفسیات کے مطابق چلنے میں ہے۔۔۔۔۔۔
    اور مرد عورت کی بقا بھی اپنی فطرت کے مطابق چلنے میں ہے۔۔۔۔۔۔
    تب ہی اس زندگی کا فطری حُسن، حقیقی حُسن میسر آسکتا ہے ورنہ ڈپریشن ، ذہنی تناؤ ہی دستک دیتے رہیں گے۔۔۔۔۔
    اور انسان نشوں میں اور غیر فطری رویوں میں ہی پناہ ڈھونڈتا رہے گا لیکن پناہ ملے گی نہیں۔۔۔۔۔
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    تحریر: آفاق احمد
    بشکریہ فیس بک

    معمول پہ ساحل رہتا ہے فطرت پہ سمندر ہوتا ہے
    طوفاں جو ڈبو دے کشتی کو کشتی ہی کے اندر ہوتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  2. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,251
    بہت عمدہ اور مفید شیئرنگ!

    ہہہہ بہت خوب، میں سمجھتا تھا شاید مجھے ہی جھوٹ موٹ کی چائے ملتی ہے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    • ظریفانہ ظریفانہ x 1
  3. ابو حسن

    ابو حسن رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جنوری 21, 2018
    پیغامات:
    353
    مجھے تو چائے کے ساتھ کیک ، سموسے، پیزا اورآئس کریم بھی ملتی ہے اور ساتھ میں حکم جاری ہوتا ہے اگربابا بات مانیں گے تو میٹھی روٹی ملے گی وگرنہ بابا کو کھٹی روٹی ملے گی:p:D
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
    • ظریفانہ ظریفانہ x 1
  4. سیما آفتاب

    سیما آفتاب ناظمہ

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اپریل 3, 2017
    پیغامات:
    398
    جزاک اللہ خیرا

    چلیں اب آپ کو پتا چل گیا کہ ہر بیٹی کے باپ کو ہی ملتی ہے یہ اسپیشل چائے :)
     
  5. سیما آفتاب

    سیما آفتاب ناظمہ

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اپریل 3, 2017
    پیغامات:
    398
    :D:D

    میری بھانجی بھی یہی کرتی ہے جو چیز مانگو وہ نہیں ہوتی اپنی پسند کس مینیو ہوتا ہے اس کا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں