صحافی کی مثال بھکاری کی طرح ہیں.

ابوعکاشہ نے 'متفرقات' میں ‏اپریل 27, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,218
    صحافی کی مثال بھکاری کی طرح ہے

    آجکل پاکستان میں نئے الیکشن کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں.ایسے موقع پر لوگ تین قسمیں نظر آتی ہیں ۔ ایک ووٹ مانگنے والے بھکاری ہوتے ہیں. دوسرے اوپر سے آرڈر لیکر ووٹ دینے اور لینے والے. اور ایک قسم بھکاریوں کی اور بھی ہوتی ہے.وہ ہے صحافی.آج کافی دنوں بعد فیسبک پر کچھ معروف صحافیوں کو پڑھا. ان کے مزاج و تیور کچھ بدلے بدلے سے دیکھے،سمجھ نہیں آئی تین دن میں کیا ماجرا ہو گیا.شیخ مقبل بن ھادی رحمہ اللہ کی بات یاد آئی کہ صحافی کی مثال بھکاری کی طرح ہوتی ہے.
    ( سوائے اس کہ جس پر اللہ نے رحم کیا )
    لکھتے ہیں
    قال العلامة المحدث مقبل بن هادي الوادعي رحمه الله:
    «نعم الصحفي مثل الدوشان. [١]
    ممكن أن يمدح بفلوس
    وأن يذم بفلوس.
    ليس لهم قيمة أخلاقية.
    فليبلغ الشاهد الغائب.
    قولوا للجواسيس بقيت هذه الكلمة، فليبلغوها:
    الصحفي مثل الدوشان.
    ممكن أن يمدحك إذا أعطيته نقودا،
    وأن يذمك إذا لم تعطه.
    لكن نحن عندنا كتاب الله وسنة رسول الله صلى الله عليه وعلى آله وسلم.
    يجب أن تحمدوا الله وتعالى».
    ((المصارعة: ٥٤٤، ٥٤٥))
    [١] الدوشان: عند اليمنيين؛ من يعتمد في اكتسابه على السؤال وهو مقتدر على الإحتراف والإكتساب، وهذه خصلة ذميمة. [المؤلف]
    ترجمہ. الطاف الرحمن سلفی.

    علامہ مقبل بن ھادی الوادعی رحمہ اللہ نے فرمایا :
    جی ہاں! صحافی کی مثال اس بھکاری کی طرح ہے جو کمانے کی طاقت رکھنے کے باوجود مانگتا پھرتا ہے۔
    اسے پیسہ ملے گا تو تعریف کرے گا.
    اور پیسہ نہ ملے تو برائی بیان کرے گا.
    [یا پیسے کی وجہ سے کسی کی تعریف کرے گا اور پیسہ کی وجہ سے کسی کی برائی اور مذمت کرے گا]
    اس کے یہاں اخلاق کی کوئی قیمت نہیں ہوتی.
    یہاں جو حاضر ہیں انہیں چاہئے کہ میرا یہ کلام دوسروں کو پہونچا دیں!
    (میرا یہ کلام) جاسوسوں کو بتا دو تو یہ کلمہ محفوظ ہوجائے گا، جاسوسوں کو چاہئے کہ میرا یہ کلام آگے پہونچا دیں:
    کہ صحافی کی مثال بھکاری کی طرح ہے.
    آپ جب اسے روکڑا دیں گے تو آپ کی تعریف کرے گا اور آپ کا گن گائے.
    اور اگر نہیں دیں گے تو آپ کی مذمت کرے گا اور برائی بیان کرے گا.
    لیکن ہمارے پاس کتاب اللہ اور سنت رسول اللہ ﷺ ہے [ہم اسے پکڑے رہیں].
    اور (اس نعمت عظمی پر) سب کو اللہ کا حمد وشکر کرتے رہنا واجب ہے».
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
    • متفق متفق x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  2. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,284
    بہت عمدہ، بے شک اکثریت ایسے ہی ہیں جو جہاں سے مال ملے انہی کے لئے کام کرتے ہیں، بلکہ آج کل تو صحافت باقاعدہ ایک بزنس بن چکا ہے جس میں بلیک میل کر کے، حقائق کو مسخ کر کے، کسی کے مخصوص ایجنڈے کو آگے بڑھا کر پیسہ وصول کیا جاتا ہے۔ ویسے بھی اہل حق ہمیشہ قلیل تعداد میں ہوتے ہیں چاہے صحافت کا شعبہ ہو یا کوئی اور۔
     
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  3. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,817

    ففتھ جنریشن وار
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں