ایون فیلڈ ریفرینس میں نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل

عائشہ نے 'خبریں' میں ‏ستمبر 19, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    ہائی کورٹ نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیرِ اعظم نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) محمد صفدر کی سزاؤں کو معطل کرتے ہوئے ان کی رہائی کا حکم دے دیا۔ https://www.dawnnews.tv/news/1087392/
    ظاہر ہے کہ اصل مقصد انتخابات کے دوران ان رہنماؤں کو عوام سے دور رکھنا مقصود تھا۔ مقصد پورا کرنے کے بعد وقتی ریلیف دے دیا گیا۔
    تاہم اس سارے تماشے میں سب سے زیادہ ذلت نیب کے حصے میں آئی جو بنیادی طور پر ایک فوجی آمر نے سیاسی انتقام کے لیے بنایا تھا۔ جس طریقے سے نیب نے فرار کی کوشش کی، ہر صاحب نظر کو سمجھ آ گیا کہ کس قسم کا احتساب ہو رہا ہے۔
     
    عطاءالرحمن منگلوری اوربابر تنویر نے اس کا شکریہ ادا کیا
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    @رفی بھائی اس موضوع کا غصہ کہیں اور نکال رہے ہیں۔ ویسے کل سے جو برنال والا لطیفہ چل رہا ہے آج اس پر یقین آ گیا۔
     
  3. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    پیغامات:
    12,450
    صحیح کہا غصہ تو بنتا ہے جب پڑھے لکھے لوگ آنکھوں دیکھی مکھی نگلنے پر مصر ہوں، کوئی بات نہیں یہی بات کچھ عرصہ بعد ہو گی تو شاید آپ کے نظریات بھی بدل چکے ہوں گے ان شاء اللہ!
     
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    جس ملک میں عدالتیں تجریدی شاعری جیسے فیصلے دیتی ہوں وہاں سیاسی بحث میں دلائل کی بجائے محاورے ہی جھونکے جائیں گے۔
    اگر فریال تالپور اور بلاول بھٹو کو انتخابات سے چند دن قبل سیاسی عمل سے دور کیا جاتا تو بھی میرے یہی نظریات ہوتے۔ لیکن ابھی اس نئی نئی اگنے والی پارٹی کے حامیوں کو یہ باتیں سمجھ نہیں آئیں گی۔
     
  5. عطاءالرحمن منگلوری

    عطاءالرحمن منگلوری -: ماہر :-

    پیغامات:
    1,475
    نیب اپنی گرتی ہوئ ساکھ بچانے سپریم کورٹ جارہی ہے.امید کی جارہی ہے کہ ہائ کورٹ کا حکم بحال رکھا جائے گا.
     
  6. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    پیغامات:
    24,484
    تفصیلی فیصلے کے بعد نیب اور جے آئی ٹی کے "ہیروں" کی ساکھ خاک میں مل گئی ہے۔ فیصلے کے مطابق سزائیں زیادہ دیر تک قائم نہیں رہ سکیں گی۔ میرے خیال میں اس بے ہودہ ڈرامے کا سکرپٹ لکھنے والے بھی کچھ دن ہی چاہتے تھے۔ انتخابات اور ضمنی انتخابات کا عرصہ ان کی مرضی کے مطابق گزر گیا۔ کافی ہے۔ گوگل سے جائیداد کی قیمت کا تعین کرنے والے احتساب کے لیے کتنے سنجیدہ تھے اندازہ کیا جا سکتا ہے۔
    پی ٹی آئی کے سپورٹرز کو ایک مرتبہ پھر برنول کی ضرورت ہے۔ پارہ آسمان پر ہے لیکن یہ ماننے کو تیار نہیں کہ کرپشن کا ثبوت دینا الزام لگانے والے پر واجب ہوتا ہے۔
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں