عورت آج بھی جلتی ہے

ساجد تاج نے 'مثالی معاشرہ' میں ‏جنوری 13, 2019 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    عورت آج بھی جلتی ہے
    دورِ جاہلیت میں لڑکی کے پیدا ہونے کو بہت بُرا تصور کیا جاتا تھا اور اسی وجہ سے لڑکی کوپیدا ہوتے ہی زندہ دفن کر دیا جاتا تھاپھر اسلام آنے کے بعد عورت کو مکمل وقار اور رتبہ دیا گیالیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ آج کے ترقی یافتہ دور میں لوگ پڑھ لکھ کربھی جاہلیت کا مظاہرہ کرتے ہیں۔پہلے وقتوں میں جس طرح عورت کو ذلیل ورسوا کیا جاتا تھا آج بھی عورت کے پیدا ہونے پر ناشکری اور غصے کا اظہار کیا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو جہیز نہ لانے پر جلایا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو پاؤں کی جوتی سمجھا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو اولاد نہ ہونے پر لعن طعن کیا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو معمولی باتوں پر مارا پیٹا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو جھوٹی غیرت کے نام قتل کیا جاتا ہے۔
    آج بھی عورتوں کو تعلیم حاصل کرنے سے روکا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو حوس کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو منحوس کہہ کر ٹھکرایا جاتا ہے۔
    آج بھی عورت کو غلطی کرنے پر گندی گالیاں دی جاتی ہیں۔
    آج بھی عورت کو سسرال والوں کے ستم سہنے پڑتے ہیں۔
    میں یہ کہنے پر مجبور ہو گیا کہ عورت کل بھی جلتی تھی عورت آج بھی جلتی ہے۔ میں حیران ہوں ایسے مردوں کی سوچ پر جو عورتوں کو صرف اپنے بستر پر دیکھنا چاہتے ہیںلیکن اسی عورت کو باعزت طریقے سے اپنے پاس رکھنا گوارہ نہیں کرتے ۔ایسے مرد بھول بیٹھے ہیں کہ جس عورت کی عزت کو پامال کیا جاتا ہے یا انہیں ٹھکرایا جاتا ہے وہ خود بھی کسی عورت کے پیٹ سے نکالے گئے ہیں ۔ مت بھولو اسی عورت میں سے اللہ نے تمہیں ماں ، بہن ، بیوی اور بیٹی جیسے عظیم رشتے عطا کیئے ہیں۔جس عورت کو تم آج ذلیل کرتے ہو، اسے زندہ جلاتے ہو ، گالم گلوچ کرتے ہو، حوس کا شکار بناتے ہو،جھوٹی غیرت کے نام پر قتل کرتے ہو، پاؤں کی جوتی سمجھتے ہو یاد رکھ اسی عورت سے تیری نسل کشی بھی ہوتی ہے۔ جس بیٹی کے پیدا ہونے پر تجھے غصہ آتا ہے وہی بیٹی تیرے لیے باعثِ نجات بن سکتی ہے۔جس بیوی پر تُو اتنے ظلم ڈھاتا ہے یہی بیوی تیرے گھر کو سنبھالے ہوئے ہے۔ جس ماں کو تُو دھکے دیتا ہے اسی ماں کے قدموں تلے تیرے رَب نے جنت بھی رکھی ہے۔ عورت کے ساتھ انصاف کرنے کی درجنوں مثالیں ہمیں اپنے پیغمبر نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی زندگی سے ملتی ہیں۔

    أَخْبَرَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ يَزِيدَ، قَالَ: حَدَّثَنَا أَبِي، قَالَ: حَدَّثَنَا حَيْوَةُ، وَذَكَرَ آخَرَ، أَنْبَأَنَا شُرَحْبِيلُ بْنُ شَرِيكٍ، أَنَّهُ سَمِعَ أَبَا عَبْدِ الرَّحْمَنِ الْحُبُلِيَّ يُحَدِّثُ،ٍ، أَنَّهُ سَمِعَ أَبَا عَبْدِ الرَّحْمَنِ الْحُبُلِيَّ يُحَدِّثُ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرِو بْنِ الْعَاصِ، أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، قَالَ: " إِنَّ الدُّنْيَا كُلَّهَا مَتَاعٌ، وَخَيْرُ مَتَاعِ الدُّنْيَا الْمَرْأَةُ الصَّالِحَةُ ".سنن نسائی:حدیث نمبر: 3234
    عبداللہ بن عمرو بن العاص رضی الله عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ”دنیا ساری کی ساری پونجی ہے (برتنے کی چیز ہے) ۱؎ لیکن ساری دنیا میں سب سے بہترین (قیمتی) چیز نیک و صالح عورت ہے“۔
    تخریج دارالدعوہ: صحیح مسلم/الرضاع ۱۷ (۱۴۶۷)، سنن ابن ماجہ/النکاح ۵ (۱۸۵۵)، (تحفة الأشراف: ۸۸۴۹)، مسند احمد (۲/۱۶۸) (صحیح)وضاحت: ۱؎: یعنی دنیا مطلوب بالذات نہیں ہے، صرف فائدہ اٹھانے کی جگہ ہے، اس لیے اس سے صرف حسب ضرورت فائدہ اٹھایا جائے۔
    قال الشيخ الالباني: صحيح
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  2. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,377
    بہت عمدہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  3. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    14,315
    عمدہ. بڑا خطرناک عنوان دیا ہے.
    بہرحال یہ غلط خیال کیا جاتا ہے کہ زمانہ جاہلیت میں فقط یہی کام تھا کہ بچیوں کو زندہ دفن کردیا جاتا تھا. صحیح صورتحال یہ ہے کہ ایسا صرف چند قبائل کے غریب طبقہ میں تھا، اور ایسے واقعات بہت کم ہیں. بعض قبائل میں لڑکوں کا ذکر بھی ملتا ہے. عورتوں کو بھی شرف حاصل تھا. اسلام نےعورتوں کے جائز حقوق دیے جو ان کا حق تھا.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  4. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    آپ کی بات سے سو فیصد اتفاق کرتا ہوں میں کہ ایسا ہر جگہ نہیں تھا. لیکن جب کسی بات کو لے کر کوئی تحریع لکھی جاتی ہے تو یقینا اس کا ٹارگٹ وہی لوگ ہوتے ہیں جو تحریر می‍ں کہی گئی بات کی زد میں آتے ہیں. بے شک اسلام میں عورت کو مکمل حقوق اور تحفظ فراہم کیا گیا مگر اس کے باوجود بھی لوگ عورت کو جلانے کے واقعات رونما ہوئے ہیں. جہیز کے لیے مار پیٹ کیا جاتا ہے اور اولاد نہ ھونے کی وجہ منحوس قرار دیا جاتا ہے. نشانہ وہی لوگ ہیں جن میں اب بھی جہالت موجود ہے
     
    • متفق متفق x 1
  5. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,848
    السلام علیکم

    عورت کے جلائے جانے پر اس کی چیخ و پکار اتنی ہوتی ہے کہ ہمسایہ آسانی سے سن لیتے ہیں لیکن اس کو بچانے کے لئے کوئی آگے نہیں بڑھتا، ایسا ہی ایک واقعہ ہمارے محلہ میں ہوا، ہمسایہ کا کہنا تھا کہ جب ہم نے دیکھا تو اوپر سے شور ڈالا مگر جلانے والوں نے ہمیں کہا کہ پیچھے ہٹ جاؤ نہیں تو تمہیں بھی جلا دیں گے، حالانکہ انہیں چاہئے تھا کہ باہر نکل کر قریب گھر والوں کو اکٹھا کر کے اس گھر پر دھاوا بول دیتے مگر افسوس ایسا نہیں ہوا، جل کر مرنے والے بیان بھی ایسا دے گئی کہ میرا خاوند رات کو گھر آیا اور میں اس کے لئے روٹیاں بنا رہی تھی تو ڈپٹہ کو آگ لگنے سے میں جل گئی، جس سے کوئی کاروائی ہیں ہوئی۔

    والسلام
     
    • متفق متفق x 2
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  6. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    یقینا ایسا بھی ھوتا ہے کہ لوگ پاس بیٹھ کر تماشا دیکھتے ہیں اور آگے بڑھ کر کوئی ظلم کو روکتا نہیں ہے. کچھ دن پہلے شاید گوجرانوالہ کی مین روڈ پر ایک شخص نے ایک جوان لڑکے کو بیچ سڑک پر کلہاڑی کے سینکڑوں وار کر کے قتل کر دیا. آس پاس لوگوں کا ہجوم لگا ہوا تھا مگر کوئی روکنے والا نہ تھا بلکہ لوگ وہاں کھڑے اس کی ویڈیو بنا رہے تھے. مارنے والا اکیلا تھا اگر چاہتے تو سب مل کر روک سکتے تھے مگر کوئی آگے نہ بڑھا
     
    • متفق متفق x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  7. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    افسوس ہوتا ہے کہ لوگ پڑھے لکھے ہو کر بھی جہالت کا مظاہرہ کرتے ہیں اور افسوس تر بات یہ ہے کہ سب کچھ پتہ ھونے کے بعد بھی ہم گمراہی کی دلدل میں گرتے جارہے ہیں. اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ ہمارے دلوں میں اپنا خوف پیدا کر دے آمین
     
    Last edited: ‏جنوری 14, 2019
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  8. ہدایت اللہ

    ہدایت اللہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جنوری 5, 2017
    پیغامات:
    43
    ماشاء الله بہت عمدہ تحریر ہے عورت کے سلسلے میں
    اللہ آپ کو جزاے خیر عطاء فرمائے آمین
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں