رجب كے مہينہ ميں عمرہ كرنا

ابن عمر نے 'ماہِ رجب المرجب' میں ‏جولائی 7, 2008 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابن عمر

    ابن عمر رحمه الله تعالى

    بانی و مہتمم اردو مجلس فورم

    شمولیت:
    ‏نومبر 16, 2006
    پیغامات:
    13,365
    [​IMG]

    س : كيا رجب كے مہينہ ميں عمرہ كرنے كى كوئى معين اور خاص فضيلت وارد ہے ؟


    ج :

    اول:
    ہمارے علم كے مطابق نبى كريم صلى اللہ عليہ وسلم سے ماہ رجب ميں عمرہ كرنے كى كوئى خاص فضيلت ثابت نہيں، اور نہ ہى اس كى كوئى ترغيب ثابت ہے، بلكہ رمضان المبارك اور حج كے مہينوں جو كہ شوال، ذوالقعدہ اور ذوالحجہ ميں عمرہ كرنے كى فضيلت ثابت ہے.

    نبى كريم صلى اللہ عليہ سے رجب ميں عمرہ كرنا ثابت نہيں، بلكہ عائشہ رضى اللہ تعالى عنہا نے تو اس كا انكار كرتے ہوئے فرمايا ہے:

    " نبى كريم صلى اللہ وسلم نے رجب كبھى بھى عمرہ نہيں كيا "

    صحيح بخارى حديث نمبر ( 1776 ) صحيح مسلم حديث نمبر (1255 )

    دوم:
    جو بعض لوگ خاص كر رجب ميں عمرہ كرتے ہيں يہ دين ميں بدعت شمار ہوتا ہے، كيونكہ وہ كسى زمانے ميں عبادت كرنے كا مكلف اس وقت ہى ہو سكتا ہے جو شريعت ميں وارد ہو.

    امام نووى رحمہ اللہ تعالى كے شاگرد ابن عطار كہتے ہيں:

    " مجھے يہ بات پہنچى ہے كہ اہل مكہ اللہ تعالى مكہ كے شرف و مرتبہ اور زيادہ كرے رجب ميں كثرت سے عمرہ كرنے كى عادت بنا چكے ہيں، اس كے متعلق مجھے تو كوئى دليل معلوم نہيں، بلكہ حديث ميں تو ہے كہ نبى كريم صلى اللہ عليہ وسلم نے فرمايا:

    " رمضان المبارك ميں عمرہ كرنا حج كے برابر ہے " انتھى

    اور شيخ محمد بن ابراہيم رحمہ اللہ تعالى اپنے فتاوى ميں كہتے ہيں:

    " رہا مسئلہ ماہ رجب كے بعض ايام زيارت كے اعمال وغيرہ كے ليے خاص كرنا تو اس كى كوئى اصل نہيں ملتى، ابو شامہ رحمہ اللہ تعالى نے اپنى كتاب " البدع والحودث " ميں يہى فيصلہ كيا ہے كہ جن اوقات ميں شريعت نے كوئى عبادت مخصوص نہيں كى اس كے وقت كى تخصيص كرنا صحيح نہيں، كيونكہ كسى وقت كو كسى دوسرے وقت پر كوئى فضيلت حاصل نہيں، ليكن جو شريعت نے كسى عبادت كو فضيلت دى ہے وہى ہے، يا پھر نيكى كے سب اعمال كو كسى دوسرے پر فضيلت دينا، اور اسى ليے علماء كرام نے رجب كے مہينہ ميں كثرت سے عمرہ كرنے كى تخصيص كرنے كو بھى غلط قرار ديا ہے" انتھى

    ديكھيں: فتاوى محمد بن ابراہيم ( 6 / 131 ).

    ليكن اگر بغير كسى معين فضيلت كا اعتقاد ركھے كوئى شخص ماہ رجب ميں عمرہ كرنے جاتا ہے، بلكہ يہ اس كے موافق آ گيا يا پھر اسے اس وقت سفر كرنا ميسر ہوا تو اس ميں كوئى حرج نہیں

    واللہ اعلم .


    الاسلام سوال وجواب
     
  2. منہج سلف

    منہج سلف --- V . I . P ---

    شمولیت:
    ‏اگست 9, 2007
    پیغامات:
    5,050
  3. خادم خلق

    خادم خلق -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 27, 2007
    پیغامات:
    4,947
    جزاک اللہ ۔
     
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,091
    جزاک اللہ خیرا ۔
     
  5. ام ثوبان

    ام ثوبان رحمہا اللہ

    شمولیت:
    ‏فروری 14, 2012
    پیغامات:
    6,691
    جزاک اللہ خیرا ۔
     
  6. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,123
    جزاک اللہ خیرا
     
  7. بنت امجد

    بنت امجد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 6, 2013
    پیغامات:
    1,570
    جزاکم اللہ خیرا
     
  8. ابو ابراهيم

    ابو ابراهيم -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مئی 11, 2009
    پیغامات:
    3,867
    جزاک اللہ خیرا
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں