بنوں میں پھرتے ہیں مارے مارے

عطاءالرحمن منگلوری نے 'گپ شپ' میں ‏اگست 7, 2019 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عطاءالرحمن منگلوری

    عطاءالرحمن منگلوری -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 9, 2012
    پیغامات:
    1,473
    خدا کے بندے تو ہیں ہزاروں، بنوں میں پھرتے ہیں مارے مارے،
    میں اس کا بندہ بنوں گا ، جس کو خدا کے بندوں سے پیار ہو گا۔۔۔!!! (حضرت اقبال)

    آج یہ شعر بار بار زباں پہ آرہا ہے اور اس کی وجہ صرف یہ ہے کہ بندہ بنوں میں دو چار روز کے لئے قیام پذیر ہوا ہے..
    اس شعر اور بنوں شہرکا آپس میں کوئ تعلق نہی سوائے لفظی موافقت کے..نسبت اور تعلق تلاش کرنے کی کوشش نہ کی جائے.

    خدا کے بندے تو ہیں ہزاروں، بنوں میں پھرتے ہیں مارے مارے،
    میں اس کا بندہ بنوں گا ، جس کو خدا کے بندوں سے پیار ہو گا۔۔۔!!! (حضرت اقبال)
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں