اردو پوائنٹ ڈاٹ کام ۔ 9th سالگرہ پر خصوصی تحریر

محمد الطاف گوہر نے 'ویب سائٹس پر تبصرے' میں ‏اکتوبر، 1, 2009 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. محمد الطاف گوہر

    محمد الطاف گوہر -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 26, 2009
    پیغامات:
    47
    محمد الطاف گوہر۔ لاہور
    mrgohar@yahoo.com
    انٹرنیٹ پر اردو کی پہچان اردو پوائنٹ ڈاٹ کا م ، اگر آپ دنیا کے سب سے بڑے سرچ انجن میں جا کر لفظ URDU ٹائپ کرتے ہیں تو سرچ انجن آپکو سب سے پہلا مشورہ فراہم کرتا ہے وہ URDUPOINT یعنی انٹرنیٹ پر اردو نے اپنا اردو پوائنٹ رکھ لیا ہے ۔ کیونکہ سرچ انجن ہمیشہ اعدادوشمار کے لحاظ سے معلومات فراہم کرتے ہیں ۔

    اردو (برج بھاشا ) زبان جسکے معنی لشکر کے بھی ہیں، یورپی لسانی خاندان کے ہندی،ایرانی شاخ کی ایک آ ریائی زبان ہے. اِس کی اِرتقاء جنوبی ایشیاء میں سلطنتِ دہلی اور مغلیہ سلطنت کے دوران ہند زبانوں پر فارسی، عربی اور ترکی کی اثر سے ہوئی. اردو (بولنے والوں کی تعداد کے لحاظ سے) دنیا کی تمام زبانوں میں بیسویں نمبر پر ہے. یہ پاکستان کی قومی زبان جبکہ بھارت کی 23 سرکاری زبانوں میں سے ایک ہے. اردو کا بعض اوقات ہندی کے ساتھ موازنہ کیا جاتا ہے. اردو اور ہندی میں بنیادی فرق یہ ہے کہ اردو نستعلیق رسم الخط میں لکھی جاتی ہے اور عربی و فارسی الفاظ استعمال کرتی ہے. جبکہ ہندی دیوناگری رسم الخط میں لکھی جاتی ہے اور سنسکرت الفاظ زیادہ استعمال کرتی ہے. کچھ ماہرینِ لسانیات اردو اور ہندی کو ایک ہی زبان کی دو معیاری صورتیں گردانتے ہیں. تاہم، دوسرے اِن کو معاش اللسانی تفرّقات کی بنیاد پر الگ سمجھتے ہیں.معیاری اردو (کھڑی بولی) کے اصل بولنے والے افراد کی تعداد 60 سے 80 ملین ہے.

    ایس.آئی.ایل نڑادیہ کے 1999ءکی شماریات کے مطابق اردو اور ہندی دنیا میں پانچویں سب سے زیادہ بولی جانی والی زبان ہے. لینگویج ٹوڈے میں جارج ویبر کے مقالے: دنیا کی دس بڑی زبانیں، میں اردو اور ہندی چینی زبانوں، انگریزی اور ہسپانوی زبان کے بعد دنیا میں سب سے زیادہ بولے جانی والی چوتھی زبان ہے. اِسے دنیا کی کل آباد کا 4.7 فیصد افراد بولتے ہیں.اردو کو پاکستان کے تمام صوبوں میں سرکاری زبان کی حیثیت حاصل ہے. یہ مدرسوں میں اعلٰی ثانوی جماعتوں تک لازمی مضمون کی طور پر پڑھائی جاتی ہے.

    انٹرنیٹ پر آپ اردو کو اردو پوائنٹ ڈاٹ کا م کے نام سے جانیں گے کیونکہ یہ اردو کی دنیا کی سب سے بڑی اور سب سے زیادہ دیکھی جانے والی ویب سائٹ ہے ۔یہ سائٹ دیکھنے والوں کیلئے طرح کے لوازمات سے بھری پڑی ہے۔ اردو لٹریچر سے دلچسپی رکھنے والوں کے لئے ویب سائٹ کسی نعمت سے کم نہیں کیونکہ بچوں کی کہانیوں اور عورتوں کے کھانے بنانے سے لیکر مردوں کے لئے تازہ ترین ملکی اور بین الاقوامی خبریں تک اس میں موجود ہیں ۔ منفرد اسلوب کی یہ ویب سائٹ اپنی نوعیت کی واحد سائٹ جبکہ یہ روزانہ Update ہوتی ہے ۔ تازہ ترین خبروں سے لیکر شب و روز کے معمولات کو سمیٹے ہوئے یہ سائٹ اپنی مثال آپ ہے ۔ معاملہ صحت کا ہو یا پکوان کا پھر کھیل کود کا ہو یا شاعری کا آپکو انواع و اقسام کی معلومات ایک ہی جگہ دیکھنے کو ملیں گی ۔
    انٹر نیٹ اعدادوشمار کے مطابق سب سے زیادہ پڑھا جانے والا مشہور اور کثیر تعداد کے ساتھ اردو لٹریچر کی مکمل ورائٹی کو سمجھتے ہوئے دنیا کی سب سے بڑی اردو پوائنٹ ڈاٹ کام ہے جبکہ روزانہ کئی ملین لوگ دنیا بھر سے اسے ملاحظہ کرتے ہے اور دو لاکھ سے زیادہ Visitors اس تک رسائی حاصل کرتے ہیں جن میں سے 88% پاکستان کے لوگ شامل ہیں جبکہ دنیا بھر کے دوسرے ممالک کے ساتھ ساتھ سب سے زیادہ UAE میں پڑھا جاتا ہے ۔

    آج کا دور معلومات اور رابطوں کا دور اور دنیا بھر کے اردو پڑھنے والے خود بخود اس ویب سائٹس کی طرف کھینچے چلے آتے ہیں کیونکہ جب بھی کوئی سر چ انجن سے مشورہ کرتا ہے تو ہے تو وہ سے سیدھا اردو پوائنٹ تک پہنچا دیتا ہے البتہ مجھے اس ویب سائٹ کا راستہ دکھانے والا ایک تو نوجوان ہے جو ایک روز تبلیغی جماعت والوں کے ساتھ میرے گھر پہ دعوت کی غرض سے آیا ۔ان لوگوں نے کچھ دین کی باتیں بتائیں اور اپنے ساتھ تبلیغ کی دعوت دی ہے۔ میں نے اس نوجوان سے جو کہ اسی محلے کا معلوم ہوتا تھا ، نام پوچھا تو بولا مجھے ندیم کہتے ہیں۔ میں نے پوچھا کیا کام کرتے ہو تو بو لا آجکل فری ہوں۔ میں نے اسے اپنے انسٹیٹیوٹ کا کارڈ دیا اور کہا کہ میں بھی ایک تبلیغ کرتا ہوں مگر لوگوں کے گھروں میں چولہا جلانے کی ۔ وہ نوجوان ایک سال کی کمپیوٹر ٹریننگ حاصل کرنے کے بعد برسر روزگار ہو گیا اور ایک اور چراغ روشن ہو گیا جو کہ میری زندگی کے مقاصد کے حصول کے تکمیل کرتا ہے۔آج اگر میں اردو پوئنٹ سے متعارف ہوا ہوں تو اسکا سہرا ندیم احمد ( منیجر سیلز اردو پوئنٹ ) کو جاتا ہے۔

    اردو پوائنٹ انتہائی کامیابی سے اپنا سفر جاری رکھے ہوئے ہے جبکہ آج انٹرنیٹ کی دنیا میں اردو کو اردو پوائنٹ سے تبدیل کرنے کا سہرا اسکی ٹیم کو جاتا ہے جنہوں نے انتہائی لگن اور مستقل مزاجی کے ساتھ دنیا میں ایک منفرد مقام حاصل کر لیا ہے۔ اردو پوائنٹ نے ایک روائتی روشن سے ہٹ کر ایک انتہائی اعلیٰ اسلوب اپنایا ہے جو کہ قابل ستائش ہے کیونکہ ایک اچھا لکھنے وا لا اس وقت تک اپنے اپ کے شناسا نہیں ہو سکتا جب تک کہ اسے پرنٹ میڈیا پر شائع ہونے کا موقع نہ ملے اور آج کے پرنٹ میڈیا میں جگہ بنانا تو دور کی بات شنوائی ہی نہیں ہوتی ۔ مگر اردو پوائنٹ جو ہر شناس ہونے کے ساتھ ساتھ جوہر تراش بھی ہے کیونکہ اس نے ہر اس نئے لکھنے والے کو موقع دیا ہے جو اس کی استطاعت رکھتا ہے۔ وگرنہ روائتی طرز میں کاغذ پر چھپنے کی خاطر ہر نئے لکھنے والے کو در در کے دھکے کھانے پٹر تے ہیں ۔ قلمی طالع آزما جو دوسرں کو موقع دینے کی بجائے متعارف ہی نہیں ہونے دیتے انکو معلوم نہیں کہ مستقبل کا مستحکم میدان انٹر نیٹ ہی ہوگا جبکہ علم و فن کسی کی میراث نہیں بلکہ ہر اچھا لکھاری اپنا قلمی مقدر خود لکھے گا ۔یہ بات بھی روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ بڑے بڑے نام اور قلمی ستون پیدائشی طور پر رائٹر نہیں ہوتے جب تک کہ ان کو اچھا پلیٹ فارم نہیں ملتا اور اردو پوئنٹ کو یہ اعزاز حاصل ہے کی اس نے ہر اچھا لکھنے والے کو ایک اعلی پلیٹ فارم دیا۔

    صحافت کا رنگ اگر کبھی زرد ہوتا بھی تو اور پوائنٹ کو اس میں شامل نہیں کیا جاسکتا کیونکہ یہ اپنے میانہ رو انداز میں سچی بات کو چھاپنے میں بیباک ہے ۔اکثر اوقات ایسی تحاریر دیکھنے کو ملتی ہیں جو کہ کسی طرح سے لگی لپٹی نہیں ہوتیں بلکہ حقائق کا جو منہ بولنا ثبوت ہوتی ہیں۔ آ ج ا ردو پوائنٹ پہ جہاں ایک طرف انتہائی اعلیٰ رائٹر موجود ہے تو دوسری طرف ہر عمر کے لوگوں کیلئے سنجیدہ موضوعات سے لے کر انتہائی اعلی درجے کی تفریحات تک کا مواد موجود ہے ۔ بندہ اس ویب سائٹ سے لذت آشنائی کے نام سے ایک سلسلہ لکھتا رہا ہے جسکے ساتھ ساتھ جدت ، مائنڈ سائنس کے موضوع کو احاطہ ء تحریر میں لاتا رہا ہے۔ اردو پوائنٹ کی بدولت مجھ میں لکھنے کا رحجان پیدا ہوا اور اگر بندہ کی اس قلم میں کچھ روانی ہے تو صرف اردو پوائنٹ کی بدولت ہے۔ یہاں مجھے زیادہ تر واسطہ و رابطہ ایک نوجوان سے رہا ہے جسے اردو پوائنٹ کی جان کہا جائے تو بجاے ہو گا فہد شبیر جو کہ انتہائی لگن اور مستقل مزاجی کے ساتھ اس ویب سائٹ سے منسلک ہے۔ انکو تحریر شناس کہوں تو بجا ہوگا، فہد اپنے کام میں انتہائی مہارت کے ساتھ ساتھ دلچسپی بھی شامل رکھتا ہے۔
    اردو پوئنٹ نیٹ ورک ٹیم کے سربراہ علی چوہدری جو کہ اس نا قابل تسخیر نام اردو پوئنٹ کے موجد ہیں ، انکی تخلیقی اور ادبی کاوش نے اردو زبان اور اردو لٹریچر کو انٹرنیٹ پہ ایک نئی پہچان دی جو کہ ایک قابل ستائش عمل ہے جس کے باعث الفاظ جو کہ صرف کاغذوں پہ بکھرے پڑ ے تھے اور پرواز (Hypertext) کی تانے ہوئے تھے، انکو ایک مکمل پلیٹ فارم دیا اور دنیا بھر سے اردو کو چاہنے والوں کو ایک پوائنٹ ، یعنی اردو پوئنٹ پر لا کھڑا کیا۔ آج دنیا میں بکھرے اردو لورز (Urdu lovers) کو ایک جگہ پر ا پنے من پسند مواد کے ساتھ ساتھ اظہار خیال کا بھی موقع ملتا ہے۔ اگر ایک طرف اردو زبان پاکستان کی قومی زبان ہے تو دوسری طرفurdupoint.com انٹرنیٹ پر پوری دنیا میں اسکی نمائندگی اور پہچان ہے اس ساری کاو ش کا صلہ علی چوہدری صاحب اور ان کی ٹیم کو جاتا ہے ۔ میں اردو پوئنٹ کو کامیابی کے سفر کے 9 برس پورے کرنے پر مبارک باد پیش کرتا ہوں اور امید کرتا ہوں کہ کامیابی کا یہ سفر اپنی پوری آب و تاب سے جاری رہے گا۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں