رفع یدین پر ایک دیوبندی عالم کی عجیب و غریب سوچ؟

محمد زاہد بن فیض نے 'مَجلِسُ طُلابِ العِلمِ' میں ‏مارچ 8, 2010 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. محمد زاہد بن فیض

    محمد زاہد بن فیض نوآموز.

    شمولیت:
    ‏جنوری 2, 2010
    پیغامات:
    3,702
    [​IMG]
    السلام و علیکم دوستو
    میرا مقصد کسی پر طنز کرنا نہیں لکین اس تحریر کو پڑھ کر حیرانگی ضرور ہوئی اس لیے سب کے سامنے شئر کر رہا ہوں ۔۔

    1۔کبھی تو مولوی صاحب کہتے ہین کہ دونوں ثابت ہین ۔۔
    تو عمل بھی دونوں‌ پر ہونا چاہیے تھا؟

    2۔امام بخاری کی جز رفع یدین پر تنقید کی گئی ہے۔
    لیکن وہی صحیح بخاری ان کے مدرسہ میں‌ بڑے زوق شوق سے پڑھائی جاتی ہے۔

    3۔لکھتے ہین اختلاف صرف افضلیت اور عدم افضلیت کا ہے۔
    تو کرنا افضل ہونا چاہیے تھا۔۔۔کیونکہ کوئی نیکی کا کام ہو کرنا افضل ہوتا ہے نہ کے نہ کرنا؟

    4 ۔لکھتے ہیں‌ رفع یدین کرنا رسول اللہ صلٰی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے ۔۔۔۔

    تو پھر نہ کرنے کا مقصد؟ شاید یہ جملہ غلطی سے لکھا گیا ہے۔؟

    5۔لکھتے ہیں‌ حنفییہ کے نزدیک رفع یدین رسول اللہ صلٰی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے۔

    لیکن پھر بھی نہ کرنا افضل ؟

    6۔حضرت عبد اللہ بن مسعود رضی اللہ تعالی عنہ کے بارے میں‌لکھتے ہیں کے وہ صرف پہلی مرتبہ کے قائل تھے۔

    لیکن وتر اور عیدین کی نماز میں حنفی بھائی بھی اس بات کے خلاف کرتے ہین ۔

    آپ لوگوں کا اس کے بارے میں کیا خیال ہے؟ ہلیز اپنی آراء سئ نوازیں شکریہ
     
    Last edited by a moderator: ‏مارچ 8, 2010
  2. شاہد نذیر

    شاہد نذیر -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏جون 16, 2009
    پیغامات:
    774
    السلام علیکم و رحمتہ اللہ!

    یہ وہ مسئلہ ہے جس میں حنفی علماء اور عوام حیران و پریشان رہتے ہیں اور گاہے بگاہے اپنے موقف اور بیانات بھی تبدیل کرتے رہتے ہیں۔

    ایک مشہور حنفی عالم مجھے فی الحال نام یاد نہیں کہتا ہے: رفع الیدین کا ایک حرف بھی منسوخ نہیں ہے۔

    شاہ ولی اللہ کہتے ہیں کہ رفع الیدین اور ترک رفع الیدین دونوں سنت ہیں لیکن مجھے رفع الیدین کرنے والا زیادہ محبوب ہے کیونکہ رفع الیدین کرنے کی احادیث زیادہ بھی ہیں اور صحیح بھی۔ دیکھئے حجتہ اللہ بالغہ

    یوسف لدھیانوی صاحب کہتے ہیں کہ رفع الیدین اور ترک رفع الیدین دونوں سنت ہیں لیکن ترک رفع الدین افضل عمل ہے۔ یوسف لدھیانوی صاحب کا یہ بھی کہنا ہے کہ رفع الدین کی احادیث کے مضامین آپس میں ٹکراتے ہیں۔ دیکھئے اختلاف امت صراط مستقیم حصہ دوم

    اس کے برعکس آج کے بہت سے حنفی علماء کا کہنا یہ ہے کہ رفع الیدین منسوخ ہے۔

    اب آپ خود ہی دیکھ لیں کہ حنفی علماء رفع الیدین کے بارے میں کوئی حتمی فیصلہ ہی نہیں کر پارہے تو اسکی وجہ کیا ہوسکتی ہے؟؟؟!!!

    اسکی اسکے علاوہ اور کیا وجہ ہے کہ جھوٹا موقف رکھنے والا انسان اپنے بیانات بدلتا رہتا ہے۔ جبکہ سچے آدمی کا ہمیشہ ایک ہی موقف رہتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اہلحدیثوں کا شروع سے آخر تک ایک ہی موقف ہے اور رہے گا کہ رفع الیدین سنت متواتراہ ہے جو کبھی منسوخ نہیں ہوئی۔

    امام بخاری جز رفع الیدین میں فرماتے ہیں کہ رفع الیدین کا انکار سوائے کوفیوں کے کسی نے نہیں کیا اور کسی ایک صحابی سے بھی ترک رفع الیدین ثابت نہیں ہے۔ یہ بھی ایک معلوم شدہ حقیقت ہے کہ حنفی مذہب اصلا کوفی مذہب ہے اور ترک رفع الیدین انہی کوفیوں کی بدعت ہے۔

     
    Last edited by a moderator: ‏مارچ 9, 2010
  3. محمد زاہد بن فیض

    محمد زاہد بن فیض نوآموز.

    شمولیت:
    ‏جنوری 2, 2010
    پیغامات:
    3,702
    ما شا ء اللہ شاہد نزیر بھائی بہت اچھے کمنٹس دئیے ہیں آپ نے۔
    جزاک اللہ
    اللہ آپ کو ہمیشہ خوش رکھے آمین
     
  4. m aslam oad

    m aslam oad نوآموز.

    شمولیت:
    ‏نومبر 14, 2008
    پیغامات:
    2,443
    جزاک اللہ
     
  5. shirazi

    shirazi -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏اگست 5, 2010
    پیغامات:
    20
    جناف حنفی نھیں تم الجھے ھو عبارت ماقبل غور سے پڑھئے اور جواب صرف حضرت عبد اللہ ابن مسعود کا دیدیں ویسے مشورتاً عرض ہے کہ اختلافی بحث نہ چھیڑیں امت بھت تھک چکی ہے ورنہ بخاری بنظرغاءیر پڑہ کر فہرست بناکر سوچیں کہ آنجناب بخاری کی کتنی حدیث پر عامل ہیں اور کتنی چھوڑیں ہیں بات لمبی ہو سکتی پر نہی خدارا اسکے علاوہ بھت کچھ جس کی ہم جیسے کم علموں کو ضروت ہے اس پر لکھیں خوب لکھیں اللہ اپ کے قلم میں اورزور پیدا کرے جواب کی ضرورت نھیں اللہ حافظ
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں